شبقدر میں نامعلوم چوروں نے گھر کا صفایا کردیا 

شبقدر میں نامعلوم چوروں نے گھر کا صفایا کردیا 

  

شبقدر (نمائندہ خصوصی)شبقدر صریح میں نا معلوم ملزمان نے دیوار پھلانگ کر گھر کا صفایا کر دیا۔ ملزمان مکان میں کمروں کے تالے توڑ کر 7 تولہ سونا ایک لاکھ دس ہزار نقدی اور 2 پستول لیکر گئے۔ تھانہ بٹگرام میں نامعلوم ملزمان کے خلاف رپورٹ درج کی گئی مگر دس روز گزرنے کے باوجود نہ ملزمان گرفتار ہوئے اور نہ ہی چوری شدہ سامان برآمد ہو سکا۔ پولیس مسلسل جھوٹی تسلیاں دے رہی ہیں جبکہ چند مشکول ملزمان گرفتاری کے بعد باعزت رہا کئے گئے۔ ڈی آئی جی مردان اور ڈی پی او فوری نوٹس لیکر انصاف دلائیں۔ ان خیالات کا اظہار شبقدر صریخ سے تعلق رکھنے والے حاضر سروس فرانٹئیر کانسٹبلری اور فرانٹیر کور میں ملازم بھائیوں زمان خان اور آمان خان پسران فرمان الدین نے اپنے ایک پریس کانفرنس میں کی۔ انہوں نے کہا کہ مورخہ 4 مئی عید کے دورسرے روز کے درمیانی شب نامعلوم ملزمان ان کے گھر کے دیوار پھلانگ کر داخل ہوئے اور کمروں کے تالے توڑ کر گھر سے قیمتی سامان  سات تولہ سونا، ایک لاکھ دس ہزار نقدی اور دو پستول لیکر گئے ہیں جبکہ مکان کے کمروں کی تلاشی کے دوران ادھر ادھر پھینکا گیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ وہ دونو ں بھائی عید کے دوران ڈیوٹیوں پر تعینات تھے جبکہ گھر کے دیگر اہلخانہ عید منانے اپنے والدین کے گھروں کو گئے ہوئے تھے۔ عید کے دوسورے روز کے درمیانی شب ملزمان نے موقع پاتے ہوئے ان کے گھروں میں دلیرنہ چوری کی ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ واقعہ کے بعد تھانہ بٹگرام میں رپورٹ بھی درج کی گئی کبکہ ملزمان کی نشاندہی کیلئے کھوج لگانے والے کتوں کی مدد بھی لی جا چکی ہے جس پر پولیس نے چند مشکوک ملزمان کو گرفتار کر لیا تھا لیکن اگلے ہی دن ملزمان کے خلاف انسداد کاروائی کرکے عدالت سے ضمانت کی گئی۔ انہوں نے کہاکہ وہ روزانہ پولیس تھانہ بٹگرام اور پولیس چوکی کے چکر لگا رہے ہیں جہاں پولیس انہیں روزانہ جھوٹی تسلیاں دے کر رخصت کرا دیتے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ قوم و ملک کی حفاظت کیلئے عید کے روز بھی ڈیوٹی کرنے سے گریز نہیں کرتے لیکن دوسری جانب مقامی پولیس ان کے ساتھ پیش آنے والے واقعہ میں کوئی تسلی بخش کاروائی نہیں کر رہے ہیں۔ واقعہ کے دس روز گزر گئے لیکن تاحال پولیس کوئی کاطر حواہ نتیجہ نہ نکال سکیں بلکہ پولیس واقعہ میں مسلسل عدم دلچسپی دیکھا رہی ہیں جس سے وہ مایوس اور دلبرداشتہ ہو چکے ہیں انہوں نے ڈی آئی جی مردان اور ڈی پی او چارسدہ سہیل خالد سے واقعہ کا فوری نوٹس لینے کا مطالبہ اور انصاف دلانے کی اپیل کی۔ 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -