سیف سٹی پراجیکٹ منصوبہ ایک خوش آئند اقدام ہے ' مہر الہی 

سیف سٹی پراجیکٹ منصوبہ ایک خوش آئند اقدام ہے ' مہر الہی 

  

پشاور(سٹی رپورٹر)مرکزی تنظیم تاجران خیبرپختونخوا صدر ملک مہر الہی، سیکرٹری جنرل شکیل احمد صراف،  سیکرٹری اطلاعات شہزاد احمد صدیقی اور دیگر اراکین نے بیانیہ جاری کرتے ہوئے صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا کہ سیف سٹی پراجیکٹ منصوبہ ایک خوش آئند اقدام ہے لیکن اس منصوبے کا آغاز پہلے فیز میں حیات آباد کی بجائے رنگ روڈ سے قلعہ بالا حصار بالخصوص فصیل شہر سے کرنا چاہیے۔ سیف سٹی پراجیکٹ کے تحت شہر بھر میں سیکورٹی کیمروں کی تنصیب کا آغاز ان علاقوں سے کرنا چاہیے جہاں موبائل اسنیچنگ، راہزنی، ڈکیتی کی واردات اور دیگر جرائم زیادہ ہیں اور بالخصوص محرم الحرام سے پہلے فصیل سیکیورٹی خدشات کے پیش نظر شہر کے خارجی و داخلی راستوں، اور محرم الحرام کے جلوسوں، میلاد النبیﷺ کے جلوس کی گزر گاہوں اور جن بازاروں میں اقلیتی برادری کی عبادت گاہیں موجود ہیں وہاں اولین بنیادوں پر سیکورٹی کیمرے مستقل بنیادوں پر نصب کئے جائیں  تاکہ شہر کی فضا کو پرامن بنانے میں اور عوام کی جان و مال کے تحفظ اور تاجر برادری کے کاروبار کی حفاظت کو یقینی بنانے میں مدد مل سکے۔ ایسے منصوبوں کی شروعات سے پہلے اسٹیک ہولڈرز سے مشاورت کی جائے تو بہتر تجاویز سامنے آ سکتی ہیں۔ گزشتہ کئی سالوں سے فصیل شہر کے اندر گلی محلوں اور بازاروں میں کسی قسم کا ترقیاتی کام نہ کر کے صوبائی حکومت نے پشاور کی عوام کے ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلوک کیا ہے۔ اور اہل بشاور آج تک زندگی کی بنیادی سہولیات بجلی، گیس، صفائی کے انتظامات، صاف پینے کے پانی کی فراہمی  اور دیگر ضروریات کے مسائل کے حل سے محرومی کا شکار ہیں۔ یہاں تک کے رات کے اوقات میں مختلف بازاروں اور شاہراوں کا سٹریٹ لائٹ کا نظام بھی درہم برہم ہے جو کہ جرائم میں اضافے کی اصل وجہ ہے۔  اور ان تمام مسائل کو حل کرنا صوبائی حکومت کی ذمہ داری اور اہل پشاور کا بنیادی حق ہے۔  تاجر برادی صوبائی حکومت کے ہر اچھے اقدام کا خیر مقدم کرتی ہے۔  اور اپنی جانب سے پشاور کی خوشحالی اور معاشی بہتری کے لئے ہر ممکن تعاون کی یقین دہانی کراتی ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -