17 مئی سے جعلی،غیرنمو نہ نمبر پلیٹ کیخلاف کریک ڈاؤن ہوگا،  منتظر مہدی

17 مئی سے جعلی،غیرنمو نہ نمبر پلیٹ کیخلاف کریک ڈاؤن ہوگا،  منتظر مہدی

  

لا ہو ر (کر ائم رپو رٹر)سی ٹی او لاہور منتظر مہدی کا کہنا ہے کہ وزیر اعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز شریف اور سی سی پی او لاہور کے حکم پر بغیر نمبر پلیٹس، بوگس جعلی اور نمبر پلیٹس سے چھیڑ چھاڑ کرنے والوں کیخلاف  بھرپور کریک ڈاؤن کیا جائے گا، شہریوں کو نمبر پلیٹس کریک ڈاؤن بارے آگاہی کیلئے  04 روز کی مہلت دے دی گئی،  سی ٹی او لاہور کا کہنا تھا کہ 17 مئی سے شہر بھر میں ہیوی کریک ڈاؤن ہوگا، منگل تک شہریوں کو وارننگ اور آگاہی دی جائے گی،  ان کا مزید کہنا تھا کہ نمبر پلیٹس پر ٹیمپرنگ، جعلی اور واضح نمبر نہ ہونے پر کوئی عذر قبول نہیں گا، علاوہ ازیں موٹرسائیکل،  گاڑی پر فینسی نمبر پلیٹس لگانے کی بھی ہرگز اجازت نہیں ہوگی، جبکہ بوگس اور نمبر پلیٹس پر ٹمپرنگ کرنے والوں کیخلاف مقدمات درج ہونگے، مقدمات موٹروہیکل آرڈیننس آرڈنینس 97 اے کے تحت درج ہونگے، سیکشن 97 اے کے تحت نمبر پلیٹس سے چھیڑ چھاڑ کرنے والوں کو دو سال تک قید اور کم از کم دو لاکھ تک جرمانہ ہوسکتا ہے، جبکہ مینو فیکچرر کو کم از کم جرمانہ 30 ہزار سے ایک لاکھ تک اور ایک سال تک کی سزا ہوسکتی ہے، منتظر مہدی کا کہنا تھا کہ آگاہی اور وارننگ مہم کے دوران ڈور ٹو ڈور آویرنس میسج پہنچایا جائے گا۔

نمبر پلیٹس مینوفیکچررز کو وارننگ نوٹسز جاری کیے جارہے ہیں،  منتظر مہدی نے میڈیا نمائندوں سے کارروائی کے طریقہ کے حوالے سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ سٹی ٹریفک پولیس اور ایکسائز ڈیپارٹنمنٹ کی 17 مشترکہ ٹیمیں تشکیل دی گئیں ہیں جو شہر کی مصروف اور اہم شاہراہوں پر خصوصی ناکہ جات لگاتے ہوئے کارروائی عمل میں لائیں گیں، منتظر مہدی کا مزید کہنا تھا کہ ایسی تمام وہیکلز جن پر نمبر پلیٹس ایکسائز کے نمونے کے مطابق لگیں ہیں، انہیں چالان نہیں کیا جائے گا، ایسے شہری جنہوں نے نمبر پلیٹس کیلئے اپلائی کیا ہوا ہے وہ ایکسائز سلیپ ساتھ رکھیں، ان کا کہنا تھا کہ شہریوں کی بڑی تعداد ای چالان سے بچنے کیلئے نمبر پلیٹس سے چھیڑ چھاڑ اور نمبر پلیٹس پر سیاہ پیپر لگا لیتے ہیں،  علاوہ ازیں قانون شکن افراد اور جرائم پیشہ افراد اپنی شناخت چھپانے کیلئے بوگس، جعلی اور اپلائیڈ فار گاڑیوں کا استعمال کرتے ہیں، منتظر مہدی کا کہنا تھا کہ ایسی وہیکلز کیخلاف کارروائی کرنے سے قانون شکن عناصر کی حوصلہ شکنی ہوگی،

مزید :

علاقائی -