چولستان، ریلیف آپریشن،7ہزار خیمے نصب کرنیکا فیصلہ

چولستان، ریلیف آپریشن،7ہزار خیمے نصب کرنیکا فیصلہ

  

میلسی (نامہ نگار)میلسی سے چند کلو میٹر کے فاصلے پر واقع صحرائے چولستان  میں  بارشی ٹوبے  خشک ہونے سے  پیدا ہوئی خشک سالی سے نسل در نسل آباد چولستانیوں کو(بقیہ نمبر2صفحہ6پر)

 تھر جیسی صورت حال کا سامنا  ہو گیا جس پر پاک فوج کے جوان ہر آفت کا مقابلہ کرنے کے اپنے ریکارڈ کو قائم کرتے ہوئے چولستان جاپہنچے ہیں۔ ڈائریکٹر پی ڈی ایم اے امتیاز خان کھچی کی سربراہی میں چولستان کے لیے پانی کے1 لاکھ اور 10000 لیٹر کی صلاحیت والے بووزرساتھ ہیں. وہاں قیام کے لیے تقریبا 7000 خیمے نصب کیے جائیں گے۔. ہزاروں کھانے کی کارٹن  جن میں ہر ایک تھیلے میں تقریبا 13 کھانے کے قابل اشیا ہوں گے جو پورے دس دن کے لیے ایک خاندان کے لیے  کافی ہوں گے۔  ساتھ ہیں اور بہت سی مزید کارروائیاں ہنگامی بنیادوں  پر کی جائیں گی دریں اثنا لاہور سے ریسکیو 1122 کی طرف سے بھی خصوصی ضروری اشیائے خورو نوش لے کر قافلے چولستان کی جانب رواں دواں ہو گئے کسی ایمرجینسی کی صورت میں لودھراں  سے بھی ریسکیو 1122 کا عملہ الگ قافلے کے ساتھ رواں دواں  ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -