نہریں خالی،فصلیں بری طرح متاثر،آم باغات بھی تباہ

نہریں خالی،فصلیں بری طرح متاثر،آم باغات بھی تباہ

  

ملتان(سپیشل رپورٹر) محکمہ انہار ملتان زون کی جانب سے نہری پانی کی قلت کے باعث ششماہی اور سالانہ نہروں کو وارہ بندی شیڈول کے تحت چلایا جارہا ہے جس(بقیہ نمبر3صفحہ6پر)

 کے باعث  جنوبی پنجاب میں نہری پانی کی شدید ترین قلت سے فصلوں کی کاشت کاعمل متاثر ہورہا ہے نہری پانی کی چوری میں مسلسل اضافہ ہوتا جارہاہے جس سے نہروں کی ٹیلیں رات کے اوقات میں پانی سے خالی رہتی ہیں حق دار آبنوشوں کوان کے حصہ کاپانی بھی دستیاب نہیں ہوتا ہے جس سے فصل کپاس کی کاشت اول موسم میں کرنا مشکل ہوگیا ہے نہری پانی کی قلت موسم گرم ہونے کی وجہ سے بڑھتی جارہی ہے رونی کیلئے نہری پانی کیلئے کاشتکارایک ایک بوند کوترس رہے ہیں جبکہ آم کے باغات کا قیمتی پھل بروقت پانی نہ ملنے سے کیرے کا شکار ہورہا ہے ان خیالات کا اظہار موضع کوٹ فقیر علی شاہ،مظفرآباد،شیر شاہ،کچور،بچ مائنر سمیت متاثرہ علاقوں کے کاشتکاروں سید خضر عباس،فضل حسین،ظہور،غلام یسین،اعجاز،امین،ملک اختر،اللہ دتہ،مجید،محمد ندیم،حاجی خورشید،رشید،حاجی امیر بخش،ربنواز ودیگر نے پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے  اپنے ملے جلے دردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کاشتکاروں کا کہنا تھا کہ زراعت پاکستانی معشیت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے لیکن نہری پانی نہ ملنے سے ملک کی بڑی نقد آوور فصل کپاس کی کاشت سمیت دیگر فصلوں اور باغات شدید متاثر ہورہے ہیں۔ متاثرہ کسانوں نے وزیر اعلی پنجاب اور محکمہ انہار کے اعلی حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ نہروں میں پانی کی فراہمی کویقینی بنانے کیلئے اقدامات کئے جائیں۔ 

مزید :

ملتان صفحہ آخر -