شوہر سے جھگڑے پر بیوی بچوں کو جاپان لے گئی، باپ 15 سال تک ڈھونڈ ہی نہ پایا اور دنیا سے رخصت ہوگیا

شوہر سے جھگڑے پر بیوی بچوں کو جاپان لے گئی، باپ 15 سال تک ڈھونڈ ہی نہ پایا اور ...
شوہر سے جھگڑے پر بیوی بچوں کو جاپان لے گئی، باپ 15 سال تک ڈھونڈ ہی نہ پایا اور دنیا سے رخصت ہوگیا

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ کے معروف مصنف ڈوگلس گیلبریتھ 2003ءمیں لاپتہ ہونے والے بچوں سے ملے بغیر دنیا سے رخصت ہو گئے تھے، اب ان کی بہن نے اپنے بھتیجوں کو تلاش کرنے کا بیڑہ اٹھا لیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق ڈوگلس کی جاپانی شہری اہلیہ ’ٹوموکو‘ گھریلو ناچاقی کے بعد بچوں کو لے کر سکاٹ لینڈ سے جاپان فرار ہو گئی تھی ۔ اس کے بعد ماں اور بچے ایسی روپوش ہوئے کہ سالہا سال کی تگ و دو کے باوجود ڈوگلس انہیں تلاش نہ کر پائے اور 23مارچ 2018ءکو58سال کی عمر میں دنیا سے رخصت ہو گئے تھے۔

ڈوگلس کی بہن کیرن میک گریگر کا کہنا ہے کہ اب وہ اپنے گمشدہ بھتیجوں کی تلاش جاری رکھے ہوئے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ”میں اپنے بھتیجوں کو تلاش کرکے انہیں بتانا چاہتی ہوں کہ ہم نے ان کی تلاش کبھی ختم نہیں کی تھی اور جب سے وہ لاپتہ ہوئے ہیں، ہم انہیں مسلسل تلاش کر رہے ہیں۔ میں انہیں بتانا چاہتی ہوں کہ ان کا باپ انہیں دیکھنے کی تمنا دل میں لیے دنیا سے چلا گیا۔“ واضح رہے کہ جب توموکو اپنے بیٹوں ساتومی اور ماکوتو کو لے کر فرار ہوئی اس وقت ساتومی کی عمر 6سال اور ماکوتو کی 4سال تھی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -