پشاور پھولوں کا شہ رہے اس جلتا ہوا نہیں دیکھ سکتے:حاجی زبیر علی

  پشاور پھولوں کا شہ رہے اس جلتا ہوا نہیں دیکھ سکتے:حاجی زبیر علی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


      پشاور(سٹی رپورٹر) میئر پشاور زبیر علی نے کہاہے کہ پشاور پھولو ں کاشہر ہے اس جلتاہوا نہیں دیکھ سکتے پشاورشہر میں جس طرح املاک اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کو نقصان پہنچایا گیا یہ ملک دشمنوں کا ہی کام ہو سکتا ہے و افسوسناک ہے انہوں نے کہا کہ  شرپسندوں نے جمہوریت کی نرسری میئرپشاور کے دفتر پر بھی حملے کئے جسے کیپٹل میٹروپولیٹن گورنمنٹ کے اہلکاروں نے پسپا کردیئے جس کے لیے سرکاری اہلکاروں کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں پی ٹی آئی کے شرپسندوں نے مئیر پشاور کے دفتر کے باہر سیکورٹی کے لئے لگائے گئے سی سی ٹی وی کیمروں کو ناکارہ کردیا اور مئیر پشاور کے دفتر کے مرکزی گیٹ کو نقصان پہنچایا ملک کا شہری کبھی ایسا نہیں کریگا، جو کریگا وہ کٹھ پتلی،دہشت گرد اور ریاست دشمن ہی کر سکتا ہے، پاکستان کے لیے ہمارے بزرگوں، افواج اور عوام نے جان و مال کی قربانیاں دیں اسے جلتا ہوا کبھی نہیں دیکھ سکتے، اس آگ کو پھیلنے سے ہر کوئی رو کیں ' پشاور شہر اور اسکے دیہاتوں کو ہم نے بڑی محنت سے سوا سال کے عرصے میں ترقی کی راہ پر گامزن کیا یہ اس سب کو دا ؤپر لگا کے ملیا میٹ کرنا چاہتے ہیں 'یہ کونسی انسانیت اور کونسا دشمن ایجنڈا ہے کہ ایمبولینس تک کو نہ بخشا گیا ایمبولینس  سے  مریض کو اتار کر جلایا گیا، یہ کیسا احتجاج تھا یہ کیسی حقوق کی جنگ تھی میئر پشاور نے کہاکہ ہم نے بطور قوم اس فتنے کا اپنی مثبت سوچ و عمل سے راستہ روکنا ہے' کامیابی اس ملک و قوم کا مقدر ہوگی پی ٹی آئی اور عمران خان پاکستان کی سیاست سے مکمل اوٹ ہوچکے ہیں ملک کی سلامتی اور آئین کی پاسداری کے لیے قدرت اور شریعت کے اصولوں کو مدنظر رکھنے کا یہی وقت ہے ' پاکستانی شہری، اور بطور مسلمان، ان دونوں پہلوں کو داغدار ہونے سے بچانا ہے 'قومی املاک کو آگ کی نظر کرنے والے کیسے ملک و قوم کے مخلص ہو سکتے ہیں، زرا اس پرسوچنا چاہیے  'ملک بھر اور بالخصوص خیبرپختونخوا و پشاور کی عوام ان شرپسندوں کے عزائم کو اپنی سوچ و فکر اور رویوں سے ناکام بنایا ہے  ایمبولینسوں، سرکاری و نجی عمارتوں، گاڑیوں اور ٹرانسپورٹ کو جلانے والے، قانونی اداروں پر پتھراو و فائر کرنے والے کیسے صرف مظاہرین ہو سکتے ہیں یہ تو دہشتگرد ہی ہوسکتے ہیں مئیر پشاور حاجی زبیر علی نے کہاکہ دین اسلام اور سنت نبوی ﷺکیا ایسی ریاست مدینہ کا درس دیتے ہیں جس میں دہشتگردی کی جائے اپنی ہی ریاست میں آگ لگائی  جائے نہیں بلکہ یہ مشتعل جتھے صرف اور صرف انارکی پھیلانا چاہتے  تھے، شہروں اور ملک کا بیڑہ غرق کرنے پر تلے  ہوئے تھے یہ سازشی لوگ، انہیں ناکام بنا ئیں '، میئر پشاور نے کہاکہ اس مزاہمتی دہشتگردی کا قطعی ساتھ نہیں د ینا چاہیے تھا بلکہ یہ گمراہ کرنے والے لوگ ہیں، جو بس مٹھی بھر ہی ہیں، گرفتاری بہانا ہے، انکا مقصد ملک کو جلانا  تھا 'معیشت کا پہیہ بٹھانا ہے، قوم کو اندھیروں میں لے جانا  تھا '،جب قانون سب کے لیے ایک ہے تو پھر قانونی گرفتاری کیلئے خانہ جنگی کیوں بنائی جارہی تھی یہ سازش ہی تو ہے۔ انشااللہ آئندہ بھی ان کو عوام کی جانب سے ایسا ہی جواب ملے گا انشااللہ