9مئی کے تمام حملہ آوروں،منصوبہ سازوں اور اکسانے والوں کو کٹہرے میں لائینگے:آرمی چیف،وزیر اعظم کا شرپسندوں 72گھنٹے میں گرفتار کرنیکا حکم

9مئی کے تمام حملہ آوروں،منصوبہ سازوں اور اکسانے والوں کو کٹہرے میں ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

          پشاور (مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں)آرمی چیف جنرل سیدعاصم منیر نے کہا ہے کہ 9 مئی کومشتعل افراد، اس پر اکسانے اور عمل کرنیوالوں کوانصاف کے کٹہرے میں لائیں گے۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق آرمی چیف جنرل عاصم منیر نے کور ہیڈ کوارٹرز پشاور کا دورہ کیا جہاں انہیں موجودہ سکیورٹی صورتحال اور انسداد دہشت گردی کی جاری کوششوں پربریفنگ دی گئی۔آرمی چیف نے کور کے افسران سے خطاب کیا اور کہا کہ ہم امن اور استحکام کی اپنی کوششیں جاری رکھیں گے، مسلح افواج اپنی تنصیبات کا تقدس اور سلامتی پامال کرنے کی مزید کوئی کوشش برداشت نہیں کرے گی۔ان کا کہنا تھاکہ 9 مئی یوم سیاہ کی کارروائیوں کے تمام منصوبہ سازوں، مشتعل افراد، اس پراکسانے اور عمل کرنے والوں کوانصاف کے کٹہرے میں لائیں گے۔جنرل عاصم منیر کا کہنا تھاکہ پاک افواج اپنی تنصیبات کو جلانے کی مزید کسی کوشش کوبرداشت نہیں کریں گی، دشمن عناصرکی جانب  سے مسلح افواج کونشانہ بنانے کی مذموم کوشش کی جارہی ہے، عوام کے تعاون سیایسی مذموم کوششوں کوناکام بنایا جائے گا۔۔آرمی چیف کا قومی سلامتی کو درپیش خطرات پر زور دیتے ہوئے کہنا تھاکہ امن و استحکام کے عمل کو خراب کرنے والوں کیلئے کوئی جگہ نہیں ہوگی،۔جنرل عاصم منیر نے انفارمیشن وار فیئر اورغلط فہمیاں پیدا کرنیکی کوششوں کے بارے میں بھی آگاہ کیا اور کہا کہ دشمن عناصرکی جانب  سے مسلح افواج کو نشانہ بنانے کی مذموم کوشش کی جارہی ہے، عوام کے تعاون سے ایسی مذموم کوششوں کو ناکام بنایا جائے گا۔۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے مطابق آرمی چیف کو موجودہ سکیورٹی صورتحال اور انسداد دہشتگردی کی جاری کوششوں بارے بریفنگ دی گئی،۔
آرمی چیف

  
لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) وزیراعظم شہباز شریف نے شرپسندوں کو 72 گھنٹے میں گرفتار کرنے کا حکمدے دیا۔  ویراعظم شہباز شریف نے کہا کہ عمران خان اور ان کا جتھا پاکستان دشمنوں سے کم نہیں، شہدا اور غازیوں کی بے حرمتی کی گئی، اپنے وطن میں اپنوں نے دشمن بن کر حملے کئے، ذمہ داروں کو چن چن کر انجام تک پہنچائیں گے، تمام مقدمات اے ٹی سی میں چلائے جائیں گے۔ وزیراعظم شہباز شریف نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے جناح ہاؤس لاہور پر حملے پر دکھ کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ اس المناک واقعہ کے بعد قوم غمگین ہے، اس طرح کا کام کوئی پاکستانی سوچ بھی نہیں سکتا، جن لوگوں نے اس بدترین حرکت میں حصہ لیا آئین میں جو سزا ہے ہر صورت دی جائے گی۔ ان کا کہنا ہے کہ جنہوں نے منصوبہ بندی کی ڈنڈے، لاٹھیاں لوگوں کے حوالے کئے، قانون ان کو گرفت میں لے گا، قانون میں درج سزائیں ان لوگوں کو ملیں گی تاکہ مثال بن جائے۔ وزیراعظم نے مزید کہا کہ یہ دلخراش منظر ملکی تاریخی میں کسی نے نہ سوچا تھا نہ دیکھا تھا، اپنے لوگوں نے دشمن بن کر ملک کی تنصیبات پر حملہ کیا۔ شہباز شریف کا کہنا ہے کہ 9 مئی کے معاملات پر آج اسلام آباد میں میٹنگ کی تھی اور ہدایات جاری کیں، جنہوں نے منصوبہ بندی کی اور جو حملہ آور ہوئے انہیں چن چن کر پکڑا جائے، ملزمان کیخلاف انسداد دہشتگردی کے مقدمات اے ٹی سی میں چلائے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ ہدایات جاری کی ہے کہ انسداد دہشتگردی کی عدالتوں کی تعداد بڑھائی جائیں، نگراں وزیراعلی پنجاب کو کہا ہے کہ خانہ پوری منظور نہیں، ملوث لوگوں کو گرفتار کیا جائے۔ وزیراعظم کا کہنا ہے کہ پاکستان کے غازیوں اور شہیدوں کیخلاف عمران نیازی اور جتھہ حملہ آور ہوا، اپنے وطن میں اپنوں نے دشمن بن کر حملے کئے، جناح ہاؤس کی حالت دیکھ کر دل خون کے آنسو رو رہا ہے، کاش ہمیں 9مئی کا دن نہ دیکھنا پڑتا۔ وزیر اعظم شہباز شریف نے ہفتہ کو لاہور میں جناح ہاس، سی ایم ایچ اور سروسز اسپتال کا دورہ کیا، اس موقع پر ان کے ہمراہ نگراں وزیراعلی پنجاب محسن نقوی بھی تھے۔ وزیراعظم نے سروسز اسپتال میں زیر علاج ڈی آئی جی علی ناصر رضوی سمیت دیگر پولیس افسران و زخمی اہلکاروں کی عیادت کی اور انتظامیہ کو زخمی افراد کے علاج معالجہ کیلئے بہترین طبی سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت کی۔ ڈی آئی جی علی ناصر رضوی پی ٹی آئی کارکنوں کے پتھراو سے زخمی ہوئے تھے۔ اس موقع پر وزیراعظم نے سرکاری املاک کو نقصان پہنچانے کی شدید مذمت کرتے ہو ئے کہا کہ پی ٹی آئی نے احتجاج کی آڑ میں دہشت گردی کی، یہ دہشت گردی اور ملک دشمنی ہے جسے کسی صورت قبول نہیں کیا جاسکتا، اسے آئینی اور جمہوری احتجاج نہیں کہا جاسکتا۔ ان کا کہنا تھا کہ بلوائیوں اور سہولت کاروں کیخلاف کارروائیوں میں کوئی رعایت نہیں برتی جائے گی، ہر حملہ آور کی شناخت کرکے قانون کے مطابق سزا دی جائے گی۔ شہباز شریف نے کہا کہ جلا گھیرا کر کے سرکاری املاک کو نقصان پہنچانے والوں کے ساتھ آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا۔ وزیراعظم نے شہدا اور غازیوں کی یاد گاروں، حساس اداروں، عمارات اور جناح ہاس کی بے حرمتی کی بھی شدید الفاظ میں مذمت کی۔وزیر اعظم محمد شہباز شریف نے مسلم باغ, بلوچستان کے ایف سی کمپاؤنڈ میں دہشت گردوں کے خلاف آپریشن کے دوران پاک فوج کے چھ جوانوں اور ایک شہری کی شہادت پر گہرے رنج اور دکھ کا اظہار کیا ہے۔ اپنے بیان میں وزیرِ اعظم نے شہداء کی بلندی درجات دعااور لواحقین سے اظہار تعزیت کیا۔وزیر اعظم نے زخمیوں کی جلد صحت یابی کی دعا اور انھیں ہر ممکن طبی امداد کی فراہمی کی ہدایت کی ہے۔ وزیر اعظم نے کہاکہ پاکستانی مسلح پاکستان کی مسلح افواج دہشت گردی کیمکمل خاتمے کے لیے پر عزم ہیں،پوری قوم سیکورٹی فورسز کے ساتھ کھڑی ہے۔وزیراعظم شہبازشریف نے سروسز ہسپتال اور کمبائنڈ ملٹری ہسپتال (سی ایم ایچ) کا دورہ کر کے سیاسی جماعت کے کارکنوں کے پتھراؤ سے زخمی ہونے والے پولیس افسران،سکیورٹی اور پولیس اہلکاروں کی عیادت کی۔شہبازشریف نے سروسز ہسپتال میں زیر علاج ڈی آئی جی آپریشنز علی ناصر رضوی اورسی ایم ایچ میں زیر علاج ڈی ایس پی بلال،کانسٹیبل شکیل اورسکیورٹی اہلکارفیصل کی عیادت کی۔ نگران وزیراعلیٰ پنجاب محسن نقوی اور دیگر بھی وزیر اعظم شہباز شریف کے ہمراہ تھے۔وزیر اعظم شہباز شریف نے ڈی آئی جی آپریشنز علی ناصر رضوی سمیت دیگر زخمیوں کی خیریت دریافت کی اور ان کی جلد صحتیابی کی دعا کرتے ہوئے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔وزیراعظم شہباز شریف نے ڈی آئی جی آپریشنز علی ناصر رضوی کے والد اورڈی ایس پی بلال کی صاحبزادی کو حوصلہ دیا۔شہبازشریف اور محسن نقوی نے زخمی افسروں اورجوانوں کے بلند حوصلے کو سراہا۔ وزیر اعظم شہباز شریف نے کہا کہ آپ نے تحمل اوربرداشت کا مظاہرہ کر کے فرض شناسی کی اعلی مثال قائم کی،قوم کو آپ پر فخر ہے،آپ قوم کے ہیرو ہیں جنہوں نے سیاسی جتھے کے مذموم عزائم کو ناکام بنایا۔وزیراعظم شہبازشریف نے کہا کہ قانون کی عملداری کو یقینی بنانے کے لئے آپ نے جذبے اورعزم سے فرائض سرانجام دیئے۔جلاؤ، گھیرا ؤاور قانون نافذ کرنے والے اداروں پر پتھرا ؤکرنے والے عناصر کے خلاف بلاامتیاز کارروائی جاری ہے۔ وزیر اعظم محمد شہباز شریف کی زیر صدرات پنجاب اور خیبر پختونخوا ہ میں گندم کی خریداری اور رسد و طلب کے حوالے سے اہم جائزہ اجلاس منعقد ہوا۔وزیراعظم محمد شہباز شریف نے  گندم کی بھرپور فصل ہونے پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ رواں سال گندم کی بھرپور فصل کا فائدہ کسانوں تک پہنچانے کے لیے عملی اقدامات کرنا ہوں گے۔وزیراعظم شہباز شریف نے  خیبر پختونخوا ہ میں گندم اور آٹے کی قیمتوں میں اضافے کا سخت نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ حکام کو خیبر پختوانخواہ میں آٹے اور گندم کی قیمت کنٹرول کرنے کرنے کے لئے اقدامات کی ہدایت کی۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ پنجاب سے خیبر پختونخوا ہ کو 10 کلو کے تین لاکھ آٹے کے تھیلے روزانہ مہیا کئے جا رہے ہیں۔ وزیر اعظم نے پنجاب سے خیبر پختونخوا ہ کو آٹے کی فراہمی بڑھانے کی ہدایت کی۔شہباز شریف نے کہا کہ گندم کی ذخیرہ اندوزی اور اسمگلنگ کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی،گندم کی غیر قانونی ذخیرہ کرنے والوں کے خلاف سخت کاروائی کی جائے۔اجلاس کو بتایا گیا کہ پنجاب گندم کی خریداری کے حوالے سے ہدف کو جلد پورا کر لے گا۔ چیف سیکرٹری خیبر پختوانخواہ نے بتایا کہ خیبر پختونخوا ہ کو پاسکو کی جانب سے 80 ہزار ٹن گندم کی ترسیل کا کام جاری ہے۔وزیر اعظم نے پنجاب اور خیبر پختونخوا ہ کے چیف سیکرٹریز کو مل کر لائحہ عمل عمل تیار کرنے کی بھی ہدایت کی۔ا
وزیر اعظم

مزید :

صفحہ اول -