ہمارے ورکرز میں غم و غصہ ضرور،سپریم کورٹ پر دھاوا بولنے نہیں جا رہے:مریم اورنگزیب

   ہمارے ورکرز میں غم و غصہ ضرور،سپریم کورٹ پر دھاوا بولنے نہیں جا رہے:مریم ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


        اسلام آباد (آن لائن) وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب نے کہاہے کہ ہمارے ورکرز میں غم و غصہ ہے،مگرہم سپریم کورٹ پر دھاوا بولنے یا پٹرول بم پھینکنے نہیں جا رہے، پرامن احتجاج ہمارا حق ہے، ہم سپریم کورٹ کے باہر پرامن احتجاج کریں گے۔ہم سپریم کورٹ کے باہر احتجاج کیلئے ڈسٹرکٹ ایڈمنسٹریشن کی اجازت کا انتظارکر رہے ہیں۔ حا لیہ پرتشدد واقعات سے عمران خان کا اصل چہرہ بے نقاب ہو چکا ہے۔پی ٹی آئی کے مسلح جتھوں نے تین دن جو کیا یہ سیاسی احتجاج نہیں تھا۔وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے نجی ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا پی ٹی آئی نے منصوبہ بندی کے تحت مسلح جتھوں کے ذریعے حالات خراب کئے۔ایمبولینسوں سے مریضوں کو نکال کر باہر پھینک دینا اور ایمبو لینسوں کو جلانا عوامی ردعمل نہیں ہوتا۔سکول، مساجد اور سرکاری املاک جلانا عوامی ردعمل نہیں ہوتا۔یہ فسادی، فتنہ ہمارے ملک کو دیمک کی طرح کھا رہا ہے۔ فارن پالیسی، معیشت، سی پیک سمیت کوئی ایسا شعبہ نہیں جو عمران خان نے تباہ نہ کیا ہو۔حکومت پارلیمنٹ اور عدلیہ ریاست کے تین ستون ہیں،ریاست کی رٹ قائم کرنا تینوں ستونوں کی ذمہ داری ہے۔ مریم اورنگزیب نے کہا عدالتی وارنٹ کی تعمیل کیلئے جب پولیس زمان پارک پہنچی تو اس کا پٹرول بموں سے استقبال ہوا۔پولیس نے ذمہ داری کیساتھ صبر و تحمل سے کام لیا۔عمران خان کیخلاف کیسز حکومت نے نہیں نیب اور ایف آئی اے نے بنائے۔عمران خان کہتے ہیں اگر انہیں گرفتار کیا تو ملک میں کوئی چیز نہیں بچے گی،آج تک کسی ملزم کو عدالت سے اتنا ریلیف نہیں ملا جتنا عمران خان کو ملا،اس قسم کے رویئے سے عدلیہ کمزور ہوگی،اتحادی جماعتوں نے تحریک عدم اعتماد کے ذریعے عمران خان کو پارلیمنٹ سے باہر پھینکا۔ عمران خان تحریک عدم اعتماد کینسل کروانے کیلئے ایوان صدر میں میٹنگ کرتے رہے۔عمران خان پر جب حملہ ہوا تو پنجاب میں ان کی اپنی حکومت تھی تو انہوں نے ایف آئی آر کیوں نہیں کٹوائی؟ عمران خان مکافات عمل سے گذر رہے ہیں، یہ نواز شریف اور شہباز شریف کی بیماری کا تمسخر اڑاتے تھے۔عمران خان کو صرف چوری پکڑے جانے کا خطرہ ہے۔
مریم اورنگزیب

مزید :

صفحہ اول -