پاکستان میں دنیا کا سب سے غیر موثر طرز حکمرانی ہے:مفتاح اسمٰعیل

  پاکستان میں دنیا کا سب سے غیر موثر طرز حکمرانی ہے:مفتاح اسمٰعیل

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


       لندن (این این آئی)سابق وزیر خزانہ اور مسلم لیگ (ن) کے رہنما مفتاح اسمٰعیل نے کہا ہے کہ ’پاکستانی ریاست غیر مؤثر ہے کیونکہ اشرافیہ اس میں خوش ہے جس حال میں وہ ہے، ہمارے پاس دنیا کی سب سے غیر مؤثر طرزِحکمرانی ہے۔ تقریب میں گفتگو کے آغاز میں مفتاح اسمٰعیل نے ملک کو درپیش چیلنجز اور ان بنیادی مسائل کے بارے میں تفصیل سے بات کی جو پاکستان کو معاشی طور پر ایک مضبوط ملک بننے سے روک رہے ہیں جو کہ عالمی سپلائی چین کا حصہ ہے  ملک کے ایلیٹ اسکولوں اور ملک بھر کے باقی ماندہ میٹرک اور سرکاری سکولوں کے درمیان وسیع فرق کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ سپریم کورٹ کے تقریباً تمام سینئر ججز اور عمران خان کے دور میں کابینہ کے نصف اراکین ایچی سن کالج سے تعلیم یافتہ تھے سرکاری اور نجی ایلیٹ سکولوں میں دی جانے والی تعلیم کے معیار کے درمیان بہت زیادہ فرق کی وجہ سے، چاہے کوئی فرد انگریزی بولے یا نہ بولے رکاوٹ بن جاتا ہے آزاد منڈیوں پر یقین رکھتا ہوں لیکن یہ پاکستان میں قابل عمل نہیں جہاں میرا بیٹا، جو دنیا کی بہترین یونیورسٹی میں جاتا ہے اور اس کے لیے پیسے ادا کرسکتا ہے وہ میرے ڈرائیور کے بیٹے سے مقابلہ کرے جس کی تعلیم کیلئے اختیارات محدود ہوں۔انہوں نے سیاسی طبقے کے ڈھانچے کو بھی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ خاندان سیاست پر حاوی ہیں اور خاندان ایک رکاوٹ کی طرح ہیں، انہوں نے صنعتی شعبے پر اشرافیہ کی گرفت کی طرف بھی اشارہ کیا جہاں انہوں نے کہا کہ 10 گروپ انڈسٹری کے 38 فیصد کو کنٹرول کرتے ہیں  جو لوگ 50 سال پہلے پاکستان میں سب سے زیادہ امیر تھے اب بھی وہی ہیں، امریکا میں اب یہ صرف راکفیلرز اور ڈو پونٹ نہیں جو امیر ہیں آپ کے پاس بل گیٹس جیسے لوگ ہیں تاہم بدقسمتی سے پاکستان میں کچھ نہیں بدلا۔انہوں نے بیوروکریسی اور فوج کی جانب اشارہ کیا، جو ان کے بقول متوسط طبقے سے تعلق رکھتے ہیں لیکن آخر کار اعلیٰ افسران کی سطح پر اشرافیہ کی گرفت کے اسی کلچر کو برقرار رکھتے ہیں  پاکستان میں گردشی قرضہ ہر حکومت کے بعد بدتر ہوا ہے انہوں نے ملک کی تیزی سے بڑھتی ہوئی آبادی کو اس کے سب سے بڑے مسائل میں سے ایک قرار دیا اور کہا کہ ہر حکومت اس سے نمٹنے میں ناکام رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ ملک کو معاشی کامیابی سے روکنے کا ایک بڑا عنصر دہشت گردی ہے۔
مفتاح اسماعیل 

مزید :

صفحہ اول -