نوجوان لڑکی کے وزن میں کچھ ہی عرصے میں 45 کلو کا اضافہ لیکن اس کی صل وجہ سامنے آئی تو زندگی کا سب سے بڑا جھٹکا لگ گیا

نوجوان لڑکی کے وزن میں کچھ ہی عرصے میں 45 کلو کا اضافہ لیکن اس کی صل وجہ سامنے ...
نوجوان لڑکی کے وزن میں کچھ ہی عرصے میں 45 کلو کا اضافہ لیکن اس کی صل وجہ سامنے آئی تو زندگی کا سب سے بڑا جھٹکا لگ گیا

  


لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) اگر آپ بھی تیزی کے ساتھ موٹے ہو رہے ہیں تو اپنے دماغ کا طبی معائنہ کروائیے، کہیں آپ بھی اس برطانوی لڑکی کی طرح برین ٹیومر کے شکار تو نہیں۔ اس 20سالہ لڑکی کا نام لیزی ڈینیسن وارڈ ہے۔ دو سال قبل اس کا وزن 57کلوگرام تھا جو ان دو سالوں میں تیزی سے بڑھتا ہوا 102کلوگرام تک جا پہنچا۔ لیزی موٹاپا شروع ہونے پر ڈاکٹروں کے پاس گئی تو انہوں نے سے کہا کہ اس کے میٹابولزم سست روی کا شکار ہو رہا ہے۔ ڈاکٹروں نے اسے صحت بخش خوراک کھانے کا مشورہ دیا۔ لڑکی نے ڈاکٹروں کی ہدایات پر عمل کیا اور دن میں صرف 1ہزار کیلوریز پر مشتمل کھانا کھانے لگی مگر اس کے وزن میں مسلسل اضافہ ہوتا چلا گیا۔

مزید جانئے: بچے کی پیدائش کے متعلق اہم مشوروں کی موبائل ایپ تیار

صورتحال زیادہ سنگین ہونے پر لیزی نے اپنا ایم آر آئی سکین کروایا جس میں انکشاف ہوا کے اس کے دماغ میں 4ملی میٹر سائز کا ٹیومر بن چکا ہے۔ یہ ٹیومر اس کے لعاب بنانے والے غدود میں تھا۔ اس ٹیومر کی وجہ سے اس کے جسم میں ہارمونز کا توازن بگڑ چکا تھا جس کی وجہ سے اس کا وزن بڑھتا جا رہا تھا۔ ڈاکٹروں نے سرجری کے ذریعے اس کا ٹیومر نکال دیا اور اب اس کا وزن خود بخود کم ہونا شروع ہو گیا ہے۔لیزی کا کہنا ہے کہ ”جب میں پہلی بار ڈاکٹروں سے ملی تو جو انہوں نے کہا میں نے اس پر اعتبار کر لیا لیکن جب میرا وزن بڑھنا کم نہ ہوا تو مجھے خیال آیا کہ میں کسی اور بیماری میں مبتلا ہو چکی ہوں، یہی سوچ کر میں نے سکین کروایا۔ اب آپریشن کے بعد خوراک میں کوئی تبدیلی لائے بغیر میرا وزن کم ہوتا جا رہا ہے۔“

مزید : تعلیم و صحت


loading...