عمارتوں کی چھتوں پر اشتہاری بورڈ لگائے جانے سے شہریوں کی جان و مال کو خطرہ

عمارتوں کی چھتوں پر اشتہاری بورڈ لگائے جانے سے شہریوں کی جان و مال کو خطرہ

لاہور(اپنے خبر نگار سے)لاہور میں ایل ڈی اے اور پی ایچ اے کے افسروں کی مبینہ ملی بھگت سے عمارتوں کی چھتوں پر اشتہاری بورڈ لگائے جانے لگے اس سے شہریوں کی جان و مال کا اندیشہ ہے ایل ڈی اے کے شعبہ ٹاؤن پلاننگ اور پی ایچ اے کے شعبہ مارکیٹنگ کے افسر اور خصوصاًانسپکٹر بھاری رشوت کے عوض چھتوں پر عارضی دیواریں تعمیر کر کے اوپر اشتہاری بور ڈ لگانے کی اجازت دے دیتے ہیں ۔تفصیلات کے مطابق شہر میں سینکڑوں گھروں کی چھتوں پر عارضی تعمیر کر کے سائن بورڈ لگانے کا کام جاری ہے اس کام میں پی ایچ اے کے شعبہ مارکیٹنگ کے افسران ،اہلکار اور خصوصاً انسپکٹر شامل ہیں۔ چھتوں پر بغیر نقشہ کے تعمیرات کر کے سائن بورڈ لگائے جا رہے ہیں،شعبہ مارکیٹنگ اور ٹاؤن پلاننگ دونوں اپنے ہی بائی لاز کی خلاف ورزی کر رہے ہیں کیونکہ پی ایچ اے کی پالیسی ہے کہ کوئی بھی سائن بورڈ مکان کے فرنٹ پر لگایا جا سکتا ہے چھت کے اوپر نہیں لگائے جا سکتے ۔ اس حوالے سے جب ایل ڈی اے افسران سے رابطہ کیا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ ایل ڈی اے کے سکیم ایریا یا کنٹرول ایریا میں ایسی کوئی تعمیر نہیں ہوتی جو بغیر نقشے کے ہو یا خلاف قانون ہو ،جب پی ایچ اے کے شعبہ مارکیٹنگ سے رابطہ کیا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ سائن بورڈ کی اجازت دینے میں اتھارٹی بے حد محتاط ہے اور کہیں بھی کوئی غیر قانونی کام نہیں کیا جا رہا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...