داعش کے خاتمے کیلئے مشرق وسطی کا استحکام ناگزیر ہے ، باراک اوبامہ

داعش کے خاتمے کیلئے مشرق وسطی کا استحکام ناگزیر ہے ، باراک اوبامہ

واشنگٹن (اظہر زمان، بیورو چیف) امریکی صدر بارک اوبامہ نے کہا ہے کہ داعش کے خاتمے کے لئے مشرق وسطیٰ کا استحکام ضروری ہے۔ جمعہ کے روز نشر ہونے والے امریکی ٹیلی ویژن ’’اے بی سی نیوز‘‘ کے ساتھ اپنے انٹرویو میں انہوں نے واضح کیا کہ امریکہ اس دہشت گرد گروہ کو سکیڑنے اور محدود کرنے کی پالیسی پر گامزن ضرور ہے لیکن یہ کارروائیاں تبھی کارگر ثابت ہوں گی جب مشرق وسطیٰ میں استحکام پیدا ہوگا۔ صدر اوبامہ کا کہنا تھا کہ ہماری تمام تر توجہ داعش کی فوجی طاقت ختم کرنے، اس کی سپلائی لائن کاٹنے اور ان کی فنڈنگ بند کرنے پر مرکوز ہے۔ یہ انٹرویو جمعرات کے روز اس وقت ریکارڈ کیا گیا جب شمالی عراق کے اہم شہر سنجار پر داعش کے قبضے کے خاتمے اور شام کے شہر رقہ میں جہادی جان کی ہلاکت کی خبریں آرہی تھیں۔ صدر اوبامہ نے واضح کیا کہ یہ دہشت گرد گروہ اب پہلے کی طرح مضبوط اور عراق میں وہ مزید علاقے پر قبضے میں کامیاب نہیں ہو رہا۔ انہوں نے تسلیم کیا کہ ابھی تک ہم داعش کے کمانڈ اور کنٹرول سسٹم کو ختم کرنے میں ناکام ضرور رہے ہیں، تاہم اس سسٹم کو کمزور ضرور کر دیا گیا ہے۔ صدر اوبامہ کہتے ہیں کہ جب تک شام کی سیاسی صورت حال درست نہیں ہوتی اور اس کے صدر بشار الاسد صرف سنی مسلک والے افراد کی حمایت ترک نہیں کرتے اور وہاں شیعہ سنی پراکسی جنگ ختم نہیں ہوتے، دہشت گردوں کے خلاف کامیابی نہیں مل سکتی۔

مزید : صفحہ اول


loading...