صوبے میں با صلاحیت کھلاڑیوں کی کمی نہیں ، ملک ق قوم کق نام روشن کرینگے ، پرویز خٹک

صوبے میں با صلاحیت کھلاڑیوں کی کمی نہیں ، ملک ق قوم کق نام روشن کرینگے ، ...

 پشاور( پاکستان نیوز)وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک نے کہا ہے کہ صوبے میں باصلاحیت کھلاڑیوں کی کوئی کمی نہیں اور انہیں یقین ہے کہ صوبے کے کھلاڑی کرکٹ کے علاوہ دیگر کھیلوں میں بھی اپنی بھرپور صلاحیتوں کا مظاہرہ کرتے ہوئے ملک و قوم کا نام روشن کریں گے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے و زیر اعلیٰ ہاؤس میں اپنی مدد آپ کے تحت بحرین جانے والی ملک سعد میموریل سپورٹس ٹرسٹ کی 26 رکنی فٹ بال ٹیم سے ملاقات میں کیا ۔ملک تجمل حیات، چیف ڈی مشن انجینئر سید محمود، ڈپٹی چیف ڈی مشن نواز خان،راشد جاوید ،فاروق حسین اور دیگر آفیشلز و کھلاڑی بھی اس موقع پر موجود تھے۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ فٹ بال ٹیم کھلاڑی سفیر کی حیثیت سے بیرونی دورے پرجا رہے ہیں اور انہیں یقین ہے کہ وہ میدان کے اندر اور میدان کے باہر سپورٹس مین سپرٹ کا مظاہرہ کریں گے انہوں نے کہا کہ ہارجیت کھیل کا حصہ ہے لیکن نظم و ضبط انہیں ہر میدان میں ممتاز رکھے گا ۔انہوں نے کہا کہ وہ خود بھی کالج دور میں کھلاڑی رہے ہیں اور یہی وجہ ہے کہ وہ صوبے میں بھی کھیلوں کی ترقی و فروغ اور کھلاڑیوں کی فلاح و بہبودکے لئے ہر ممکن اقدامات کر رہے ہیں۔پرویز خٹک نے اس امر پر مسرت کا اظہار کیا کہ خیبر پختون خوا کی تاریخ میں پہلی بار فٹ بال ٹیم بحرین کا دورہ کر رہی ہے جہاں وہ مقامی ٹیموں کے خلاف تین میچوں کی دوستانہ سیریز کھیلے گی اس سیریز سے انہیں بین الاقوامی تجربہ حاصل ہو گاجو مستقبل میں ان کے کام آئے گا۔وزیر اعلیٰ پرویز خٹک نے ایک بار پھر کھلاڑیوں کو اپنی جانب سے ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا۔ اس موقع پر ملک سعد میموریل سپورٹس ٹرسٹ کے ممبر ٹرسٹی اور ممتاز ماہر تعلیم ملک تجمل حیات نے انہیں شیلڈ پیش کی۔واضح رہے کہ خیبر پختون خوا کی 26 رکنی فٹ بال ٹیم سات روزہ غیر ملکی دورے پر20 نومبر کو پشاور سے بحرین روانہ ہو گی۔

پشاور( پاکستان نیوز)وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی ہے کہ کوہستان میں مزید چھوٹے پن بجلی گھروں کے قیام کیلئے موزوں مقامات کی نشاندہی کریں تاکہ مقامی آبادی کیلئے بجلی بحران میں کمی آسکے انہوں نے لوئر کوہستان میں پن بجلی گھروں کی ملازمتوں میں مقامی آبادی کو ترجیح کی ہدایت بھی کی ہے وہ آج وزیراعلیٰ سیکرٹریٹ پشاور میں لوئر کوہستان کے آٹھ رکنی وفد سے گفتگو کر رہے تھے وفدنے وزیراعلیٰ کے مشیر حاجی عبد الحق کی سربراہی میں وزیراعلیٰ سے ملاقات کی اس موقع پر محکمہ انرجی اینڈ پاور کے چیف پلاننگ آفیسر زین اﷲ شاہ ، چیف ایگزیکٹیو آفیسر پراونشل انرجی ڈویلپمنٹ آرگنائزیشن (پیڈو) اکبر ایوب، پراجیکٹ ڈائریکٹر رانولیہ ہائیڈل پراجیکٹ ناصر گنڈا پور و دیگر حکام بھی موجود تھے وفد نے وزیراعلیٰ کو اپنے علاقے میں درپیش متعدد مسائل و مشکلات سے آگاہ کیا اور خصوصی طور پر کوہستان میں چھوٹے پن بجلی گھروں میں علاقائی لوگوں کی ملازمتوں اور مقامی آبادی کو ان بجلی گھروں سے بجلی کی فراہمی کے بارے میں ان سے بات چیت کی اس موقع پر وزیراعلیٰ نے کہاکہ ہمارے پاس تقریباً100 ہائیڈل پاور منصوبوں کی گنجائش موجود ہے جس کیلئے صوبائی حکومت کے پاس مالی وسائل بھی موجود ہیں اور کوہستان میں مزید پن بجلی گھروں کی تنصیب کیلئے موزوں مقامات تلاش کئے جائیں تاکہ وہاں پر مزید چھوٹے پن بجلی گھر وں کا قیام عمل میں لایا جا سکے اُنہوں نے کہاکہ ان منصوبوں سے علاقائی آبادی کو تقریباًچار روپے فی یونٹ کے حساب سے انتہائی کم نرخ پر بجلی فراہم کی جائے گی جس سے نہ صرف مقامی سطح پر 24 گھنٹے عوام کو بجلی میسر ہو گی بلکہ بجلی بحران پر بھی خاطر خواہ قابو پایا جا سکے گا وزیراعلیٰ نے اس موقع پر متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ لوئر کوہستان میں کالج کے قیام کے اقدامات کو تیز کیا جائے کیونکہ کوہستان جیسے پسماندہ علاقے میں تعلیم کی فراہمی کی زیادہ ضرورت ہے اور صوبائی حکومت کا یہ مشن ہے کہ صوبے کے عوام کو ہر سطح پر تعلیم کے زیو ر سے آراستہ کیا جائے گا وزیراعلیٰ نے اس موقع پر وفد کویقین دلایا کہ کوہستان میں انڈسٹریل اسٹیٹ کے قیام پر بھی غور کیا جائے گا جس کو آدھی قیمت پر بجلی فراہم کی جائے گی اور اس سے معیشت پر مثبت اثرات مرتب ہونگے وزیراعلیٰ نے رانولیہ ہائیڈل پراجیکٹ لوئر کوہستان کی ٹرانسمشن لائن میں متاثر گھروں اور پراجیکٹ کی بنائی گئی سٹرک کے اراضی مالکان کی مالی معاونت کی بھی ہدایت کی ۔

مزید : پشاورصفحہ اول