ٹوپی ،عمران خان کے جلسہ کیلئے طلب اجلاس ناکامی کا شکار

ٹوپی ،عمران خان کے جلسہ کیلئے طلب اجلاس ناکامی کا شکار

ٹوپی ( نامہ نگار) عمران خان کی 22نومبر کے جلسے کے طلب کردہ پی ٹی آئی ور کرز میٹنگ ناکامی کا شکار ، تحصیل نائب ناظم کو بولنے کی اجازت نہ دینے پر تحصیل ٹوپی کے نمائندوں نے پروگرام چھوڑ کر چلے گئے اعلان کردہ منصوبوں کو عملی جامہ نہ پہنانے ،اختیارات اور فنڈز نہ ملنے کی صورت میں ضلعی اور تحصیل ممبرز کامستعفی ہو نے کی دھمکی ذرائع، تفصیل کے مطابق 12 نومر کو باجا میں پی ٹی آئی کا حاجی رنگیز احمد خان کے ڈیرے پر منعقدہ عمران خان کے دورے کے بارے میں طلب کردہ میٹنگ جس میں سپیکر صوبائی اسمبلی اسد قیصر،سینئر صوبائی وزیر اور وزیر صحت شہرام خان ترکئی اور دیگر سرکردہ رہنما کثیر تعداد میں موجود تھی اجلاس سے خطاب کے دوران شہرام خان ترکئی نے چند دن پہلے ایک نجی ٹی وی چینل کے سو ل ہسپتال ٹوپی کے وزٹ کو چند عناصر کی جانب سے بلیک میلنگ قرار دیے جانے کی جواب میں تحصیل ٹوپی کے نائب ناظم محمد یونس خان کو بولنے کی اجازت نہ دینے پر تحصیل ٹوپی کے تمام نمائندوں او ر ورکرز نے ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے تقریب سے بائیکاٹ کر دیا اور پروگرام ادھورا چھوڑ چلے گئے باخبر ذرائع کے مطابق پی ٹی آئی تحصیل ٹوپی کے ضلعی تحصیل اور ویلجزکونسل ممبران کی اکثریت نے تحصیل ٹوپی میں اعلان کردہ منصوبوں کو عملی جامہ نہ پہنا نے،فنڈز اور اختیارات نہ ملنے کی صورت میں پارٹی سے مستعفی ہو نے کی دھمکی دیتے ہو ئے کہا کہ موجودہ حکومت نے نمائندوں کو ملنے والی اختیارات انتہائی نہ ہو نے کی برابر جبکہ مشرف دور حکومت کے اختیارات اس سے کئی گُنا بہتر تھے

مزید : پشاورصفحہ اول


loading...