سزائے موت اور عمر قید پانے والے دو قیدی گواہوں کی عدم دستیابی پر بری

سزائے موت اور عمر قید پانے والے دو قیدی گواہوں کی عدم دستیابی پر بری

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے قتل کے مقدمہ میں سزائے موت اور عمر قید پانے والے دو قیدیوں کو چشم دید گواہوں کے بیانات کی عدم دستیابی اور دیگر گواہوں کے بیانات میں مماثلت نہ ہونے پر بری کرنے کا حکم دے دیا۔ مسٹر جسٹس طارق محمودعباسی کی سربراہی میں دورکنی بنچ نے اپیل کنندگان زاہد اور شہباز کی سزا کے خلاف اپیلوں پر سماعت کی، اپیل کنندگان کے وکلاء نے موقف اختیار کیا کہ ٹرائل کورٹ نے گواہوں کے بیانات میں مماثلت نہ ہونے اور وقوعہ کے چشم دید گواہوں کی عدم دستیابی کے باوجود انہیں سزائیں سنائی ہیں لہٰذا اپیل کنندگان کی سزائے کالعدم کرتے ہوئے انہیں بری کرنے کاحکم دیا جائے۔ عدالت نے فریقین کے دلائل سننے اور ریکارڈ دیکھنے کے بعد سزائیں کالعدم کرتے ہوئے انہیں بری کرنے کا حکم دے دیا۔

مزید : صفحہ آخر