روزمرہ استعمال کی ایک چیز جو لوگوں کو بانجھ بنارہی ہے، جدید تحقیق میں سائنسدانوں کا ایسا انکشاف کہ سب کو پریشان کردیا

روزمرہ استعمال کی ایک چیز جو لوگوں کو بانجھ بنارہی ہے، جدید تحقیق میں ...
روزمرہ استعمال کی ایک چیز جو لوگوں کو بانجھ بنارہی ہے، جدید تحقیق میں سائنسدانوں کا ایسا انکشاف کہ سب کو پریشان کردیا

  


واشنگٹن (نیوز ڈیسک) باورچی خانے اور بیت الخلاءکی صفائی کے لئے مختلف قسم کے تیزابوں اور کیمیکلز کا استعمال آج کل بہت عام ہوچکا ہے۔ یہ مصنوعات ہمارے لئے ایک بڑی سہولت کا سبب تو بنی ہیں لیکن شائد ہم اس سہولت کی بہت بڑی قیمت بھی ادا کررہے ہیں۔ امریکا میں ورجینیا ٹیک یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے حال ہی میں ایک تحقیق کی جس میں یہ تشویشناک انکشاف ہوا کہ باورچی خانے اور بیت الخلاءکی صفائی کے لئے استعمال ہونے والے عام کیمیکل محلول جنسی و تولیدی صحت کے لئے ایک بڑا خطرہ ثابت ہوسکتے ہیں۔

سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ ان میں عام طور پر کواٹر نری امونیم کمپاﺅنڈ پائے جاتے ہیں اور چوہوں پر تجربات کرنے سے معلوم ہوا ہے کہ یہ ناصرف مرد میں سپرم کی پیداوار کو کم کردیتے ہیں بلکہ مادہ میں بیضے کی پیداوار کو بھی منفی طور پر متاثر کرتے ہیں۔ سائنسی جریدے Reproductive Toxicology میں شائع ہونے والی اس تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ امریکا میں بانجھ پن کی شرح میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے اور تحقیق کاروں نے خیال ظاہر کیا ہے کہ اس میں صفائی کے لئے استعمال ہونے والے کیمیکلز ایک بڑا کردار ادا کررہے ہیں۔

مزید جانئے: بزرگ عرب شہری اپنی بیوی کی شکایت کرنے پولیس سٹیشن پہنچ گیا،شادی شدہ مردحضرات کیلئے لمحہ فکریہ

یونیورسٹی آف کیلیفورنیا کی پروفیسر ٹریسی ووڈ رف کا کہنا ہے کہ جب چوہوں کی تولیدی صحت پر ان کیمیکلز کے منفی اثرات واضح طور پر ثابت ہوچکے ہیں تو کوئی وجہ نہیں کہ ہم سمجھیں کہ یہ انسانوں کے لئے یہی نقصانات پیدا نہیں کررہے۔ وہ کہتی ہیں کہ اگر آپ براہ راست صفائی کے کام سے منسلک نہیں بھی ہیں تو متاثرہ جگہوں کا استعمال کرنے سے آپ ان کے منفی اثرات کا شکار بن سکتے ہیں۔

سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ صفائی والے کیمیکلز کے ماحول میں سپرم کی صحت بری طرح متاثر ہوتی ہے، ناصرف اس میں کمزوری واقع ہوتی ہے بلکہ اس کی حرکت کرنے کی صلاحیت بھی متاثر ہوتی ہے۔ اسی طرح کیمیکلز سے متاثر ہونے والے مادہ چوہوں میں حاملہ ہونے کی صلاحیت سخت متاثر دیکھی گئی۔

دوسری جانب صفائی کے لئے استعمال ہونے والے کیمیکل بیچنے والی کمپنیوں کا موقف ہے کہ اس تحقیق میں بے جا طور پر تشویش کا اظہار کیا گیا ہے۔ ان کمپنیوں کا کہنا ہے کہ حکومتی اداروں سے منظور شدہ کیمیکلز میں ایسے منفی اثرات نہیں پائے جاتے۔ یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ سائنسدان تو منظور شدہ کیمکلز کے بارے میں بھی تحفظات کا اظہار کررہے ہیں تو ایسے میں غیر منظور شدہ اور غیر معیاری سپرے اور کیمیکلز کے اثرات کیاں ہوں گے، اس کا اندازہ لگانا مشکل نہیں۔

مزید : تعلیم و صحت


loading...