ائیر پورٹ حملہ کیس ،سندھ ہائی کورٹ نے مقدمہ سکھر منتقل کرنے کے خلاف پراسیکیوٹر جنرل اور دیگر کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا

ائیر پورٹ حملہ کیس ،سندھ ہائی کورٹ نے مقدمہ سکھر منتقل کرنے کے خلاف ...
ائیر پورٹ حملہ کیس ،سندھ ہائی کورٹ نے مقدمہ سکھر منتقل کرنے کے خلاف پراسیکیوٹر جنرل اور دیگر کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن) سندھ ہائیکورٹ نے ایئرپورٹ حملہ کیس کراچی سے منتقل کرنے کے خلاف درخواست پر پراسیکیوٹر جنرل سندھ سمیت دیگر کو نوٹس جاری کردیئے ہیں۔

نجی ٹی وی چینل ’’اب تک نیوز ‘‘ کے مطابق سندھ ہائیکورٹ میں دو رکنی بینچ کے روبرو ایئرپورٹ حملہ کیس کراچی سے سکھر منتقلی کے خلاف درخواست کی سماعت ہوئی،عدالت نے ملزم سرمد صدیقی کی درخواست پر پراسیکیوٹر جنرل سندھ اور دیگر کو نوٹس جاری کرتے ہوئے  12 دسمبر کو جواب طلب کرلیا ہے۔کیس کی سماعت کے دوران جسٹس صادق حسین بھٹی نے ریماکس دیئے کہ جب ملزمان کے گواہ کا تعلق کراچی سے ہے تو مقدمہ سکھر کیوں منتقل کیا گیا؟ پراسیکیوٹر نے بتایا کہ عدالت نے اس سے قبل صرف پراسیکیوٹر جنرل کو نوٹس جاری کیا تھا، دیگر سے بھی جواب مانگا جائے۔جس پر دو رکنی بنچ نے پراسیکیوٹر جنرل سندھ اور دیگر کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 12 دسمبر کو جواب طلب کرلیا ۔

واضح رہے سندھ ہائی کورٹ میں دائر درخواست کے مطابق ایئرپورٹ حملہ کیس میں 4 دہشتگردوں کو ملٹری کورٹ نے سزا سنائی۔ ندیم پٹیل اور سرمد صدیقی کا مقدمہ اے ٹی سی جیل ٹرائل کیلئے منتقل کیا گیا جبکہ  ایئر پورٹ حملہ کیس کا ٹرائل اے ٹی سی کراچی میں آخری مراحل میں ہے۔درخواست میں ملزمان کا کہنا ہے کہسی ٹی ڈی نے مفرور ملزم عبد الرشید کی گرفتاری ظاہر کرکے 21 اکتوبر کو مقدمہ سکھر منتقل کردیاتھا ، سکھر میں ہماری جان کو خطرہ ہے، لہذا  ایئر پورٹ حملہ کیس سکھر منتقل کرنے سے روکا جائے۔

مزید :

کراچی -