پنجاب شوگرانڈسٹری کل سے کرشنگ سیزن شروع کرے‘سمیع اللہ چوہدری

پنجاب شوگرانڈسٹری کل سے کرشنگ سیزن شروع کرے‘سمیع اللہ چوہدری

لاہور(این این آئی) صوبائی وزیر خوراک سمیع اللہ چوہدری نے کہا ہے کہ وزیراعظم پاکستان عمران خان کی ہدایت کے مطابق صوبہ پنجاب میں گنے کے کاشتکاروں کے مفادات کا تحفظ ہرصورت یقینی بنایا جائے گااور اس ضمن میں محکمہ خوراک پنجاب ممکن حد تک تعاون فراہم کرے گا۔ان خیالات کا اظہار صوبائی وزیر خوراک نے یہاں شوگر سیکٹر سے متعلقہ مسائل کے حل اور نگرانی کے لئے قائم کیبنٹ کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیاجس میں صوبائی وزیر زراعت ملک نعمان احمد لنگڑیال، صوبائی وزیر آبپاشی محسن لغاری اور صوبائی وزیر صنعت وتجارت میاں اسلم اقبال کے علاوہ کین کمشنر پنجاب واجد علی شاہ اور چیئرمین پاکستان شوگرملز ایسوسی ایشن (پنجاب زون ) نعمان خان نے بھی شرکت کی۔ صوبائی وزیر خوراک سمیع اللہ چوہدری نے کہا کہ شوگرانڈسٹری جتنی دیانتداری اور خوش اسلوبی سے اپنا کام انجام دے گی ہمارا کاشتکار اتنا ہی خوشحال ہوگا۔ پنجاب شوگرانڈسٹری 15نومبر سے کرشنگ سیزن کے آغاز کو ممکن بنائے جس سے کاشتکار طبقہ (خصوصاچھوٹے کاشتکار) اور ملز مالکان دونوں ہی مستفید ہوسکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ محکمہ خوراک پنجاب ملزمالکان کو زیادہ سے زیادہ سہولیات فراہم کرنے کی پالیسی پر گامزن ہے اور حال ہی میں محکمہ خوراک پنجاب نے وفاقی حکومت سے پنجاب شوگرانڈسٹری کو سرپلس چینی برآمد کرنے کی اجازت حاصل کی ہے۔ اجلاس میں صوبائی وزیر زراعت نے خوراک اور زراعت کی انڈسٹری سے متعلقہ مسائل کے حل کے لئے میڈیا کی جانب سے میکانزم بنانے پر زور دیا۔صوبائی وزیر آبپاشی نے کہا کہ شوگرایکٹ 1950پر مکمل عملدرآمد وقت کی اہم ضرورت ہے جبکہ صوبائی وزیر صنعت وتجارت نے اجلاس میں کہا کہ حکومت پنجاب ہرمشکل وقت میں پنجاب شوگرانڈسٹری کے ساتھ کھڑی ہے لیکن بشرط آپ چھوٹے کاشتکاروں کا خیال رکھیں۔اس موقع پر اجلاس میں صوبائی وزراء خوراک ، زراعت ، آبپاشی اور صنعت و تجارت نے متفقہ طور پر ملزمالکان کو کرشنگ سیزن بروقت شروع کرنے ، گنے کے کاشتکاروں کو ٹائم پر ادائیگی ، حکومتی ریٹ 180روپے فی من کے حساب سے رقم کی ادائیگی اور وزن کو پورا بنانے کی اپیل کی۔بعدازاں چیئرمین پاکستان شوگرملز ایسوسی ایشن (پنجاب زون)نعمان خان نے پنجاب میں شوگرملزانڈسٹری کو درپیش مسائل سے آگاہ کیا جس پر صوبائی وزراء خوراک ، زراعت، آبپاشی اور صنعت و تجارت نے متفقہ طور پر اس انڈسٹری سے وابستہ مسائل کو حل کرنے کی یقین دہانی کرائی۔

مزید : کامرس