صوبائی دارالحکومت ، ہر گھنٹے 3ڈکیتیاں ماہانہ ڈیڈھ کروڑ کا پٹرول پھونکنے والی ڈولفن فورس کی کارکردگی

صوبائی دارالحکومت ، ہر گھنٹے 3ڈکیتیاں ماہانہ ڈیڈھ کروڑ کا پٹرول پھونکنے والی ...

لاہور(رپورٹ : یو نس باٹھ ) لاہور پولیس شہریوں کو تحفظ فراہم کرنے میں ناکام،ڈولفن فورس ماہانہ ڈیڑھ کروڑ روپے کا پٹرول استعمال کر نے کے با وجو وارداتوں کی شرح میں کمی نہیں لا سکی، ہر گھنٹے میں3شہری لٹنے لگے۔یکم جنوری 2018سے 31اکتوبر 2018تک 10ماہ کے دوران لاہور میں ڈکیتی ، راہزنی ، چوری ، گاڑی و موٹر سائیکل چھینے اور چوری کئے جانے کی دیگر 20ہزار 7سو سے زائدوارداتیں رجسٹرڈ ہوئیں۔جن میں شہریوں کو اڑھائی ارب روپے سے زائد مالی نقصان کا سامنا کرنا پڑا۔متعدد مقدما ت کی فوٹیج سامنے آنے کے با وجود پو لیس ڈاکوؤں کے دند ناتے گینگ گرفتار نہ کر سکی۔ معلوم ہواہے کہ لاہور پولیس کی قیادت کو مشکلات کا سامنا ہے۔ کیونکہ پولیس شہریوں کے جان ومال کے تحفظ میں بری طرح ناکام ہوچکی ہے۔ پو لیس ذرائع نے بتایا ہے کہ لاہور میں گزشتہ10 ماہ کے دوران یکم جنوری 2018سے 31اکتوبر 2018تک شہر میں ڈکیتی ، راہزنی ، چوری ، گاڑی و موٹر سائیکل چھینے اورچوری کئے جانے اور چوری کی دیگر 20ہزار 7سو سے زائدرجسٹرڈ وارداتیں ہوئیں۔اور یوں اوسطاً لاہور میں 24گھنٹوں کے دوران ہر ایک گھنٹے میں کم از کم 3شہری اپنی جمع پونچی سے محروم ہوتے رہے۔پولیس کے اپنے اعداوشمار کے مطابق گزشتہ 10ماہ کے دوران لاہور میں ڈکیتی کے دوران قتل کی 24وارداتیں ہوئیں،پٹرول پمپ پر ڈکیتی کی ایک واردات ، مرکزی راستوں پر ڈکیتی کی 21وارداتیں ہوئیں، گھروں میں 32، دکانوں میں 25اور ڈکیتی کی متفرق وارداتیں 13ہوئیں۔ اسی طرح گزشتہ 10ماہ کے دوران شہر میں تعزیرات پاکستان کی دفعہ 382کے تحت چوری 201وارداتیں ہوئیں، نقب زنی کی چار ہزار 05، گاڑی چھیننے کی34، گاڑی چوری کی 8سو 41، موٹر سائیکل چھیننے کی 4سو 96اور موٹر سائیکل چوری کی 3ہزار 9سو 11، جبکہ گاڑیاں چھینے جانے کی متفرق وارداتیں 33اور گاڑیاں چوری کئے جانے کی متفرق وارداتیں4سو 55ہوئیں۔اسی طرح گزشتہ 10ماہ کے دوران لاہور میں سائیکل چوری کی 101، تار چوری کی 14، مویشی چوری کی ایک سو 92،درخت چوری کی 27،پرس چھیننے کی 3سو 92،موبائل فون چھیننے کی 4سو 01اور چوری کی متفرق 5ہزار 2سو سے زائد وارداتیں ہوئیں۔ذرائع کے مطابق ساڑھے 20ہزار سے زائد چوری و ڈکیتی کی ان وارداتوں میں شہریوں کواڑھائی ارب روپے سے زائد کا نقصان اٹھانا پڑا۔شہر میں ہونے والی ان وارداتوں کے حوالے سے سی سی پی او لا ہور بی اے ناصرنے موقف اختیار کیا ہے کہ پو لیس نے اب تک درجنوں گینگ گرفتار کیے ہیں ۔اربوں روپے کا لوٹا ہوا سامان برآمد کیا ہے ۔جو گینگ گرفتار نہیں ہو ئے پو لیس کی ٹیمیں ان کی گرفتاری کے لیے چھاپے مار رہی ہے۔

مزید : صفحہ آخر