اینٹی کرپشن نے ریسکیو 1122کیخلاف تحقیقات کا دائرہ وسیع کر دیا

اینٹی کرپشن نے ریسکیو 1122کیخلاف تحقیقات کا دائرہ وسیع کر دیا

لاہور(اپنے نمائندے سے )ینٹی کرپشن نے ریسکیوون ون ٹوٹو کے خلاف تحقیقات کا دائرہ کار وسیع کردیا،اینٹی کرپشن حکام نے ڈی جی ریسکیو ڈاکٹر رضوان نصیر سے موٹربائیک ایمبولینس منصوبہ، افسروں کو گھروں اور گاڑیوں کی الاٹمنٹ،گاڑیوں اور یونیفارم سمیت ہرقسم کی خریداریوں کے لئے کی گئی ادائیگیوں کا مکمل ریکارڈ طلب کرلیاہے۔ڈائریکٹر اینٹی کرپشن لاہورریجن محمد اصغر جوئیہ کی ہدایت پر ریسکیوون ون ٹو ٹو کے خلاف تحقیقات کا دائرہ کار وسیع کردیا گیاہے۔ڈپٹی ڈائریکٹراینٹی کرپشن شاہ رخ نیازی نے ڈی جی ریسکیورضوان نصیر کو خط لکھ کر ریسکیو1122 کے موٹر بائیک ایمبولینس منصوبہ کا مکمل ریکارڈ طلب کرلیا ہے ۔پنجاب ایمرجنسی کونسل کے تمام اجلاسوں کی مکمل کارروائی کی رپورٹ بھی مانگ لی گئی ہے۔ اینٹی کرپشن نے ڈی جی ریسکیو1122سے ٹینڈرز دستاویزات،اشتہارات اور تمام ٹھیکیداروں کا ریکارڈ ، ادائیگیوں کاریکارڈ ،چائنیز ایمبولینس کے ٹینڈرز کی نہ صرف مکمل دستاویزات بلکہ ریسکیو1122 کے مالی سال 2016،17 اورسال2017،18 کے آڈٹ پیراز ، سرجیکل گلووز،ڈیڈباڈی شیٹس،وائرلیس آلات،فائرٹرکس،ریکوری اورریسکیوگاڑیوں،کاٹن بینڈیج کی خریداریوں کا ریکارڈبھی مانگ لیا ہے۔اینٹی کرپشن نے بیرون ملک ٹریننگ کی تفصیلات ، اہلکاروں کی بھرتیوں کیلئے ریکرورٹمنٹ فارمزکی فروخت سے جمع ہونے والی رقوم ، ڈاکٹرز، افسروں و عملہ کو دیئے گئے الاؤنس کی تفصیلات ،ریسکیو1122 کیلیگل اسسٹنٹ شکیل عاصم اورانکے تین بھائیوں کی بھرتیوں کاریکارڈ، ایمرجنسی آفیسرڈاکٹر رضوان چوہدری،ڈپٹی ڈائریکٹر آپریشنزڈاکٹر شہزاد،شکیل فریال اور ہیڈ آف لاعلی حسن کی چھٹیوں کا ریکارڈ بھی طلب کر لیا ہے۔ ڈپٹی ڈائریکٹر شاہ رخ نیازی نے ریسکیو1122 کے ڈائریکٹر ایڈمن بریگیڈیئرریٹائرڈ ارشد ضیا کی تعیناتی کا ریکارڈ اور مدت ملازمت میں توسیع کی تفصیلات بھی مانگ لی ہیں۔

ریسکیو تحقیقات

مزید : صفحہ آخر