مولانا سمیع الحق کا سیکریٹری احمد شاہ اپنی رہائشگاہ سے غائب

مولانا سمیع الحق کا سیکریٹری احمد شاہ اپنی رہائشگاہ سے غائب

راولپنڈی(سٹاف رپورٹر)ج میعت علمائے اسلام (س) کے سربراہ مولانا سمیع الحق کے سیکریٹری احمد شاہ اکوڑہ خٹک میں واقع اپنی رہائش گاہ سے گزشتہ 3 سے 4 روز سے لاپتہ ہیں۔میڈیارپورٹس میں کہا گیا ہے کہان کے اہلِ خانہ نے دعویٰ کیا ہے کہ انہیں قانون نافذ کرنے والے اہلکار اپنے ساتھ لے گئے ہیں جبکہ پولیس نے ان کی حراست کی تردید کی ہے۔خیال رہے کہ احمد شاہ نے ہی مولانا سمیع الحق کے قتل کے بارے میں آگاہ کیا تھا ۔ مولانا کے قتل کے بعد ان کے صاحبزادے مولانا حامد الحق کو بھی احمد شاہ نے ہی واقعے سے متعلق آگاہ کیا تھا۔اس ضمن میں میڈیارپورٹس کے مطابق مولانا حامد الحق نے بتایا کہ احمد شاہ گزشتہ 3، 4 روز سے اپنے گھر سے لاپتہ ہیں ان کے اہلِ خانہ نے ان سے موبائل فون پر رابطہ کرنے کی کوشش کی لیکن ان کا نمبر بند جارہا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ہمارا احمد شاہ سے گزشتہ کچھ دنوں سے کوئی رابطہ نہیں ہوا ۔مولانا حامد الحق کا مزید کہنا تھا کہ ہم پولیس کے ساتھ بھرپور تعاون کررہے ہیں اب یہ ان کا کام ہے کہ وہ میرے والد کے قاتلوں کو پکڑے، انہوں نے بتایا کہ پولیس نے ایک مرتبہ ہی اکوڑہ خٹک کا دورہ کیا اور اس کے بعد تفتیش کے سلسلے میں اہلِ خانہ سے کوئی رابطہ نہیں کیا گیا۔انہوں نے بتایا کہ قتل سے کچھ عرصہ قبل افغان وفد ان کے والد کے پاس آیا تھا اور طالبان کے ساتھ امن مذاکرت کے آغاز کی درخواست کی تھی لیکن انہوں نے انکار کردیا تھا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ ان کے والد کی جان کو خطرہ تھا اس کے باوجود انہوں نے کبھی پولیس یا محافظین کو اپنے ساتھ نہیں رکھا کیوں کہ ان کی کسی سے ذاتی دشمنی نہیں تھی۔دوسری جانب راولپنڈی پولیس نے احمد شاہ کی حراست سے انکار کیا ہے تاہم ان کا کہنا تھا کہ پولیس کی تفتیش جاری ہے جس میں مولانا سمیع الحق سے رابطے میں رہنے والے کئی افراد سے پوچھ گچھ کی جاچکی ہے۔اعلیٰ پولیس اہلکار کے مطابق احمد شاہ مذکورہ معاملے میں مرکزی اہمیت رکھتے ہیں ان کے بیان سے قاتلوں تک پہنچنا اور قتل کے محرکات جاننا ممکن ہوسکتا ہے۔اس کے ساتھ پولیس کو فرانزک شواہد اور ڈی این اے کے نمونوں کی رپورٹ کا بھی انتظار ہے جس کے بعد مزید تحقیقات کی جائیں گی۔

سیکرٹری غائب

مزید : صفحہ اول