مغوی ایس پی طاہر داوڑ افغانستان میں طالبان کے ہاتھوں قتل

مغوی ایس پی طاہر داوڑ افغانستان میں طالبان کے ہاتھوں قتل

اسلام آباد(آن لائن)اسلام آباد سے اغواء ہونیوالے ایس پی پشاور رورل طاہر خان داوڑ کو افغانستان میں قتل کردیا گیا ۔ میڈیا رپوٹس کے مطابق ایس پی رورل پشاور طاہر خان داوڑ کو 27اکتو بر کو اسلام آباد سے لاپتہ ہوگئے تھے ان کے اہل خانہ نے تصدیق کی ہے کہ انہیں افغانستان میں قتل کردیا گیا ہے ۔دوسری طرف کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے ترجمان محمد خراسانی نے اسلام آباد سے لاپتا ہونے والے پشاور پولیس کے ایس پی محمد طاہر خان داوڑ کے قتل کی ذمہ داری قبول کر لی ہے۔امریکی خبر رساں ادارے کے مطابق طاہر خان داوڑ کو سرحد پار افغانستان میں انتہائی بے دردی کیساتھ قتل کر دیا گیا ہے جبکہ افغان حکام کی طرف سے ابھی تک لاش پاکستانی حکام کے حوالے نہیں کی گئی۔ایس پی طاہر خان داوڑ کی میت پاکستان کے حوالے کرنے کے حوالے سے با ر ڈر پر پاک افغان حکام کے درمیان بات چیت جاری ہے جبکہ دوسری جانب طورخم بارڈر پر قبائلی عمائدین کی بہت بڑی تعداد ایس پی طاہر داوڑ کی لاش وصول کرنے کیلئے جمع ہے۔مقتول ایس پی طاہر خان داوڑ کی میت کیساتھ ان کی پولیس سروس کا کارڈ اور طالبان عسکریت پسندوں کا تحریر کردہ ایک خط بھی ملا ہے جس میں کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے ترجمان محمد خراسانی نے طاہر خان داوڑ کے قتل کی ذمہ داری قبول کر لی ہے۔دوسری جانب طاہر خان داوڑ کے قتل کی تصاویرسوشل میڈیا پر بھی وائرل ہوگئی ہیں اس حوالے سے وزیرمملکت برائے داخلہ شہریار خان آفریدی نے صحافیوں سے گفتگو میں کہا طاہر خان داوڑ کا معاملہ حساس ہے اس پر بات نہیں کرسکتے یہ نیشنل سکیورٹی اور کسی کی زندگی کی بات ہے ۔اوپن فورم میں بات نہیں کی جاسکتی ۔

ایس پی طاہر قتل

مزید : صفحہ اول