بڑے بھائی نے پرانی گاڑی کی لالچ میں چھوٹے بھائی پر مبینہ جھوٹا مقدمہ درج

بڑے بھائی نے پرانی گاڑی کی لالچ میں چھوٹے بھائی پر مبینہ جھوٹا مقدمہ درج

راولپنڈی(سٹی رپورٹر)خون سفید ہو گیا بڑے بھائی نے پرانی گاڑی کی لالچ میں چھوٹے بھائی پر مبینہ جھوٹا مقدمہ درج کروا دیا جھوٹے پرچے کی وجہ سے پولیس نے دفعہ 182 کے تحت مدعی کے خلاف عدالت میں مقدمہ دائر کر دیا۔ مدعی مقدمہ کا سامنا کرنے کے بجائے لندن بھاگ گیا عدالت نے مدعی کو اشتہاری قرار دیا اور پانچ لاکھ روپے جرمانہ بھی عائد کر دیا اب مدعی کا پاکستان آنا ناممکن ہو گیا ۔تفصیلات کے مطابق راولپنڈی چمن زار کے رہائشی بڑے بھائی فیروز علی ولد سردار علی نے اپنے چھوٹے بھائی شیراز علی پر2014 میں گھریلو رنجش اور پرانی گاڑی 82 ماڈل کی لالچ میں جھوٹی اور من گھڑت FIR درج کروا دی دوران تفتیش مدعی کوئی الزام ثابت نہ کرسکا اور نہ ہی اپنے موقف کی تائید میں کوئی گواہی پیش کر سکا پولیس تھانہ وارث خان نے رپورٹ اخراج مرتب کر کے بغرض اخراج سماعت عدالت مجاز میں بھجوائی جس کو علاقہ مجسٹریٹ صاحب نے بھی 2015 میں رپورٹ اخراج سے اتفاق کیا پولیس نے جھوٹا اور من گھڑت پرچہ در ج کروانے پر فیروز علی کے خلاف کلندرہ زیر دفعہ 182 کے تحت مقدمہ درج کروا دیا فیروز علی مقدمہ کا سامنا کرنے کے بجائے لندن بھاگ گیا عدالت نے یک طرفہ کاروائی کرتے ہوئے 13 ستمبر 2018 کو فیروز علی کو اشتہاری قرار دے دیا اور پانچ لاکھ روپے جرمانہ بھی عائد کر دیا اب اشتہاری فیروز علی کے لیے پاکستان آنا ناممکن بن گیا یاد رہے کہ چھوٹا بھائی شیراز علی اپنے بڑے بھائی فیروز علی اور اس کے بچوں کو لند ن لے کر گیا تھا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر