گرینڈحیات ہوٹل کی لیزمنسوخی کیخلاف اپیل کی سماعت،مجھے اس سے پہلے کچھ اورکیس دیکھنے ہیں،اسے بعدمیں دیکھیں گے، چیف جسٹس

گرینڈحیات ہوٹل کی لیزمنسوخی کیخلاف اپیل کی سماعت،مجھے اس سے پہلے کچھ اورکیس ...
گرینڈحیات ہوٹل کی لیزمنسوخی کیخلاف اپیل کی سماعت،مجھے اس سے پہلے کچھ اورکیس دیکھنے ہیں،اسے بعدمیں دیکھیں گے، چیف جسٹس

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)چیف جسٹس ثاقب نثار نے گرینڈحیات ہوٹل کی لیزمنسوخی کیخلاف اپیل پر ریمارکس دیتے ہوئے کہا ہے کہ مجھے اس سے پہلے کچھ اورکیس دیکھنے ہیں،اس کیس کوبعدمیں دیکھیں گے۔

چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں بنچ نے گرینڈحیات ہوٹل کی لیزمنسوخی کیخلاف اپیل پرسماعت کی، علی ظفر ایڈووکیٹ نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ 65 ہزارفی مربع فٹ کے حساب سے پلاٹ نیلام ہوا،سی ڈی اے بورڈ نے لیز 2017 میں منسوخ کردی،اسلام آباد ہائیکورٹ نے 3 مارچ 2018 کولیزمنسوخی کافیصلہ برقراررکھا،علی ظفر ایڈووکیٹ نے کہا کہ ہائیکورٹ نے کہاسروس اپارٹمنٹ بیچے نہیں جاسکتے۔

چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ 99 سال کی لیزفروخت ہی ہوتی ہے،یہ بھی دیکھاجائےگاکہ کیاسی ڈی اے زمین فرخت کرنے کی مجازتھی؟، چیف جسٹس نے کہا کہ اس معاملے میں فراڈ کے عنصرکوبھی دیکھیں گے۔

وکیل سی ڈی اے نے کہا کہ ماسٹرپلان میں ترمیم کی منظوری کابینہ سے نہیں لی گئی،جسٹس اعجاز الاحسن نے استفسار کیا کہ اگر منظوری نہیں تھی تواشتہارکیوں دیاگیا؟۔چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ مجھے اس سے پہلے کچھ اورکیس دیکھنے ہیں،اس کیس کوبعدمیں دیکھیں گے۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد