سعودی عرب میں چچازاد بھائی کے سفاک قاتل داعشی جنگجو کا سرقلم

سعودی عرب میں چچازاد بھائی کے سفاک قاتل داعشی جنگجو کا سرقلم
سعودی عرب میں چچازاد بھائی کے سفاک قاتل داعشی جنگجو کا سرقلم

  

ریاض(این این آئی)سعودی عرب میں 4 سال قبل اپنے چچا زاد بھائی کو بے دردی سے قتل کرنے والے سخت گیر جنگجو گروپ داعش کے ایک رکن کا سرقلم کر دیا گیا ہے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق سعودی عرب کی وزارت داخلہ نے سعودی شہری ماجد سعد بن رضی العنزی کا سرقلم کرنے کی اطلاع دی ہے۔اس نے بیان میں مملکت میں امن وامان اور سلامتی کو تہ وبالا کرنے والوں کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے کی ضرورت پر زور دیا ہے۔استغاثہ کے مطابق داعش کا یہ جنگجو سعودی عرب کے علاقے حائل میں اپنے ایک چچا زاد بھائی کو بہلا پھسلا کر صحرائی علاقے میں لے گیا تھا۔ وہاں اس کو بے دردی سے قتل کر دیا تھا اور اس کی ویڈیو بنا کر انٹر نیٹ پر پوسٹ کردی تھی۔ایک سعودی عدالت نے اس کو دہشت گردی کے جرائم میں قصور وار قرار دے کر سزائے موت سنائی تھی۔اس کی جاری کردہ ویڈیو میں مقتول جان بخشی کی دہائی دیتے ہوئے سنا جاسکتا تھا اور وہ بار بار اس کو سعد کہہ کر پکار رہا تھا اور اس کو جان سے نہ مارنے کے واسطے دیتا رہا تھا، داعشی کی اس سفاکیت کے واقعے نے سعودی مملکت کے شہریوں کو ہلا کر رکھ دیا تھا اور اس مجرم نے دو اور جرائم کا بھی ارتکاب کیا تھا۔اس نے حائل ہی میں ایک پولیس سٹیشن میں 2 سیکیو رٹی اہلکاروں کو قتل کردیا تھا اور صوبہ الشملی میں محکمہ ٹریفک کے ایک سارجنٹ عبداللہ آل سعود برآ لرشدی کو فائرنگ کرکے شہید کردیا تھا۔

مزید : عرب دنیا