بنگلہ دیش سے روہنگیا مسلمانوں کی جبراً واپسی روکنے کا مطالبہ

بنگلہ دیش سے روہنگیا مسلمانوں کی جبراً واپسی روکنے کا مطالبہ
بنگلہ دیش سے روہنگیا مسلمانوں کی جبراً واپسی روکنے کا مطالبہ

  

جنیوا (این این آئی)اقوام متحدہ نے بنگلہ دیش کی جانب سے پناہ گزین روہنگیا مسلمانوں کی جبراً بے دخلی کا عمل انسانی حقوق کے خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے میانمار واپسی کا عمل روکنے کا مطالبہ کردیا۔

غیرملکی خبررساں ادار ے کے مطابق اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے سربراہ مائیکل بچیلیٹ نے کہا کہ بنگلہ دیش میں پناہ گزینوں کو جبراً بے دخل اور واپسی کے لیے مجبور کرنا انسانی حقوق کی خلاف وزری ہے۔ان کا کہنا تھا کہ میانمار، جہاں پناہ گزینوں کو زندگی کا خطرہ لاحق ہے، ایسے حالات میں ان کی واپسی ممکن نہیں ہوسکتی۔خیال رہے کہ گزشتہ برس میانمار کی شمالی ریاست رخائن میں مسلمانوں کے قتل عام کے بعد 7 لاکھ 20 ہزار سے زائد روہنگیا مسلمان ملک چھوڑنے پر مجبور ہوئے تھے۔اقوام متحدہ کی تحقیقاتی کمیٹی نے میانمار میں نسل کشی میں ملوث اعلیٰ فوجی حکام کے خلاف مقدمات قائم کرنے کا مطالبہ کیا تھا، تاہم میانمار کی حکومت نے اس مطالبے کو مسترد کردیا تھا۔

مزید : بین الاقوامی