علی حیدر گیلانی اور جیالوں کے خلاف مقدمہ کی مذمت کرتے ہیں‘ نوابزادہ افتخار احمد

  علی حیدر گیلانی اور جیالوں کے خلاف مقدمہ کی مذمت کرتے ہیں‘ نوابزادہ ...

  



مظفرگڑھ (نامہ نگار) سابق وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی کے بیٹے علی حیدر گیلانی ایم پی اے و پیپلز پارٹی کے دیگر کارکنوں کے خلاف (بقیہ نمبر47صفحہ12پر)

جھوٹی ایف آئی آر درج ہونے کی بھرپور مذمت کرتے ہیں۔ ایسی کارروائیوں سے جیالوں کو پست نہیں کیا جا سکتا۔ علی حیدر گیلانی کے خلاف فرمائشی مقدمہ کو دو روز میں خارج نہ کیا گیا تو پاکستان بھر میں کارکن بھر پور احتجاج کریں گے۔ پیپلزپارٹی کے جیالوں کو اپنے قائدین کی حفاظت کرنا آتی ہے.ان خیالات کا اظہارضلعی صدر ملک بلال کھر.پیپلز پارٹی ساؤتھ پنجاب کے نائب صدر وممبر قومی اسمبلی مھرارشاداحمدسیال. پیپلز پارٹی ساؤتھ پنجاب کے سیکرٹری اطلاعات وممبر قومی اسمبلی نوابزادہ افتخار احمد خان. ممبر قومی اسمبلی ملک رضاربانی کھر ڈویڑنل جنرل سیکرٹری میر آصف دستی اور.مظہر پہوڑ ضلعی جنرل سیکرٹری پیپلز پارٹی مظفر گڑھ نے اپنے مشترکہ بیان میں کیا کرتے ہوئے کیاانھوں نے کہا کہ اس جھوٹی ایف آئی آر کے خلاف ھر سطح پر احتجاج کرینگے ایف آئی آر کے اخراج تک احتجاج کا دائرہ وسیع ہوتا جائیگا۔ انہوں نے کہا کہ ڈی پی او مظفرگڑھ کو جواب دینا پڑے گا کہ یہ جھوٹی ایف آئی آر کس کی فرمائش پر درج کی گئی اور کس کے کہنے پر جلسہ گاہ میں آنے والے جلوسوں کو تین تین میل دور روکا گیا۔اور راستے میں رکاوٹیں ڈالی گئیں۔جبکہ پارٹی قائدین سے انتظامیہ سے جلوسوں کے روٹ طے تھے۔ چئیرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری کا جلسہ مظفرگڑھ ناکام کرنے کیلئیحکومت نے ہر حربہ استعمال کیا۔ لیکن جلسہ گاہ کا پنڈال عوام سے بھر جانے پر مخالفین بوکھلاہٹ کا شکار ہو گئے اور جلوسوں کو تین تین میل دور روکنا شروع کردیا۔ لوگوں کو واپس گھر جانے پر مجبور کر دیا گیا۔ اور مخدوم علی حیدر گیلانی جو انتظامیہ اور سیکورٹی اداروں کے طے شدہ روٹ سے گذر رہے تھے تو کسی کی فرمائش پر پولیس نے انکا راستہ روکا۔ اجلاس میں سردار اللہ بخش چانڈیو ملک صفدرپہوڑ ایڈووکیٹ. سردار اللہ نواز علی زئی ایڈووکیٹ سردار مصطفی بلوچ سردار ظفراللہ لغاری ایڈووکیٹ جام مظہر ایڈووکیٹ. رانا مجاھد.پیپلز یوتھ کے ساحل چانڈیہ سلیم رند. ملک بلال کالرو. ملک الطاف کالرو سید زاھد شاہ. سید ملازم حسین شاہ ایڈووکیٹ سید باقر حسین شاہ ایڈووکیٹ. ودیگر موجود تھے.

مذمت

مزید : ملتان صفحہ آخر