نواب ریاض قریشی شریف النفس‘ واضع دار انسان تھے‘ شاہ محمود قریشی 

نواب ریاض قریشی شریف النفس‘ واضع دار انسان تھے‘ شاہ محمود قریشی 

  



ملتان (سپیشل رپورٹر)وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ وائٹ ہاؤس ملتان کی اپنی ایک تاریخ ہے۔ اس گھر میں ملک بھر سے سائنسدانوں کو بلایا گیا اور پاکستان کو ایٹمی قوت بنانے کا فیصلہ کیا گیا۔ اس گھر میں پاکستان کو محفوظ کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ اس گھر میں کئے گئے فیصلوں کی بدولت پاکستان ناقابل تسخیر قوت بن چکا ہے اور کوئی دنیاوی طاقت پاکستان کی طرف میلی آنکھ سے نہیں دیکھ(بقیہ نمبر11صفحہ12پر)

 سکتی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز اپنے کزن نواب ریاض حسین قریشی مرحوم کی قل خوانی کے موقع پر شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا وائٹ ہاؤس کے مکین رواداری‘ وزاداری میں اپنی مثال آپ تھے یہاں کے بزرگوں نے ملتان کے لوگوں میں محبتیں اور خوشیاں بانٹیں۔ اب اس گھر کی نوجوان نسل کو اپنے بزرگوں کی روایات کا امین بننا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس دنیا میں ہم سب لوگ مسافر ہیں اور سب نے ابدی سفر پر جانا ہے۔ہمیں اس سفر کے لیے تیاری کرنا ہوگی۔ اس سفر کیلئے زاد راہ تیار کرنا ہوگا۔ انہوں کہا نواب ریاض حسین قریشی ایک شریف النفس اور وضعدار انسان تھے۔ مرحوم ہر ایک سے پیار کرنے والے اور خوش اخلاق انسان تھے۔ مرحوم کی کمی اور خلاء مدتوں پُر نہیں ہوگا۔ قبل ازیں وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کے کزن اور سابق گورنر و وزیراعلیٰ پنجاب نواب صادق حسین قریشی مرحوم کے فرزند نواب ریاض حسین قریشی کی رسم قل خوانی گزشتہ روز ان کی رہائش گاہ وائٹ ہاؤس ملتان میں ادا کی گئی۔اس موقع پر مجلس عزاء سے ممتاز عالم دین علامہ ناصر سبطین ہاشمی نے خطاب کیا۔ قل خوانی میں زندگی کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والی شخصیات نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ جن میں پی ٹی آئی کے مرکزی رہنما جہانگیر خان ترین‘ علی خان ترین‘ مخدوم مرید حسین قریشی‘ مخدومزادہ زین حسین قریشی‘ مخدوم جاوید ہاشمی‘ملک عامر ڈوگر‘سابق وفاقی وزیر سید تنویر الحسن گیلانی‘ سابق وزیر قانون زاہد حامد‘اورنگزیب خان کھچی‘ ملک جہانزیب وارن‘ معین ریاض قریشی‘ پیر ظہور حسین قریشی‘ صوبائی وزراء ڈاکٹر اختر ملک‘سید حسین جہانیاں گردیزی‘ اراکین صوبائی اسمبلی ملک سلیم لابر‘ ملک واصف مظہر راں‘ ندیم قریشی‘ حاجی جاوید اختر انصاری‘ وسیم خان بادوزئی‘ سید تنویر الحسن گیلانی‘ پیر عارف زمان قریشی‘ خواجہ جلال الدین رومی‘ارشاد قریشی ایڈووکیٹ‘ نواب مقبول قریشی‘ سید حیدر زمان گردیزی‘اظہر قریشی‘ سید حیدر عباس گردیزی‘وائس چانسلر زرعی یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر راؤ آصف علی‘عمر نواز بابر‘ عاطف راں‘ ملک عبدالرحمن بوہنہ‘ ملک نور زمان مہے‘ اعجاز جنجوعہ‘ ملک ظہور مہے‘ دلیر مہار‘ رانا ندیم‘ حامد دھرالہ‘ چودھری بن یامین ساجد‘ رانا عرفان‘ ممتاز خان بلوچ‘ سلیم خان کھیڑا‘ مہر ضمیر سنڈھل‘ صہیب راشد خان‘ ملک شہزاد انجم‘ حامد جنجوعہ‘ رانا عبدالجبار‘ رانا افضل‘ مخدوم شعیب اکمل ہاشمی‘ رانا عمران‘ نجف خان سیال‘ رانا نعیم‘ میاں جمیل‘خالد جاوید وڑائچ‘حافظ اقبال خان خاکوانی‘ عرفان نقوی‘ سید سجاد بخاری‘ شوکت اشفاق‘ مظہر جاوید‘ اسد ممتاز‘ خواجہ فاضل‘ بریگیڈئر(ر) مقصو د قریشی‘ شہزاد گیلانی‘ ڈاکٹر آصف قریشی‘ رانا سجاد حمید‘ ملک عاشق شجرا‘ عمران گردیزی‘ اشرف قریشی‘ شیخ طاہر حمید‘ ملک جمال لابر‘ جواد قریشی‘ عرفان میو‘ کبیر قریشی‘ خواجہ سلیمان صدیقی شامل ہیں۔ وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے قل خوانی کے بعد مرحوم ریاض حسین قریشی‘ عاشق حسین قریشی مرحوم‘ اپنی ہمشیرہ اور خاندان کے دیگر بزرگوں کے ایصال ثواب اور درجات کی بلندی کیلئے دعا کروائی۔ انہوں نے مرحوم ریاض حسین قریشی کے بڑے صاحبزادے حسن حسین قریشی کی دستار بندی کی اور غم کے اس لمحات میں شرکت کرنے پر اپنے خانوادہ کی جانب سے شرکاء کا شکریہ ادا کیا#

شاہ محمود 

مزید : ملتان صفحہ آخر