شوگر کا عالمی دن، شعبہ اینڈوکرائنالوجی سروسز ہسپتال کے تحت آگاہی واک آج ہو گی

شوگر کا عالمی دن، شعبہ اینڈوکرائنالوجی سروسز ہسپتال کے تحت آگاہی واک آج ہو ...

  



لاہور(خصوصی رپورٹ) آج 14 نومبر کو پوری دنیا میں شوگرکے عالمی دن کے طور پر منایا جائیگا۔یہ سلسلہ 1991 سے شروع ہوا، امسال 14 نومبر 2019 کو  اٹھائیسواں سالانہ شوگر کا عالمی دن منایا جارہا ہے۔1991 میں اس کا آغاز انٹرنیشنل ڈایابیٹیز فیڈریشن (IDF) اور ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن(WHO) کے تحت کیا گیا اور اس وقت دنیا کے 130 سے زائد ممالک میں یہ دن منایا جاتا ہے۔شوگر کے عالمی دن کو 14 نومبر سے ہی کیوں منسوب کیا گیا ہے؟جہاں یہ ایک دلچسپ سوال ہے وہیں اس کا جواب بھی نہایت دلچسپ ہے۔دراصل 14 نومبر فریڈرک بینٹنگ(Fradrick  Banting) کا تاریخ پیدائش ہے۔یہ وہ انسان تھا جس نے 1922 میں اپنے تجربات کے ذریعے انسولین دریافت کی  اور ثابت کیا یہی وہ ہارمون ہے جو جسم میں شوگر کنٹرول کرنے کیلئے ناگزیر ہے۔فریڈرک کو اس عظیم کارنامے پر نوبل پرائز سے بھی نوازا گیا اور بعد میں اسے مزید خراج تحسین پیش کرنے کی غرض سے اس کی تاریخ پیدائش 14 نومبر کو شوگر کے عالمی دن سے منسوب کیا گیا۔اس دن کو منانے کا مقصد یہی ہے کہ عوام کو اس کے بارے میں بھرپور اور عام فہم انداز میں آگاہی فراہم کی جائے۔ہر سال کی طرح امسال بھی سروسز ہسپتال کے شعبہ اینڈوکرائنالوجی کے تحت ایک واک کا اہتمام کیا گیا ہے تاکہ موذی مرض سے بچاؤ کیلئے آگاہی پھیلانے خود،اپنے پیاروں اورملک بھرکے عوام کو مرض سے بچانے میں اپنا کردار ادا کیا جا سکے۔

آگاہی واک

مزید : صفحہ آخر