کابل، وزارت داخلہ دفتر کے قریب دھماکہ، 12افراد جاں بحق، 20زخمی

کابل، وزارت داخلہ دفتر کے قریب دھماکہ، 12افراد جاں بحق، 20زخمی

  



کابل(ایجنسیاں)افغان دارالحکومت میں وزارت داخلہ کے قریب کار بم دھماکے میں 12افراد جاں بحق جبکہ20 زخمی ہو گئے،جاں بحق ہونے والوں میں تین بچے بھی شامل بتائے جاتے ہیں۔قریب کھڑی گاڑیوں کو بھی شدید نقصان پہنچا، افغان وزارت داخلہ کے وزیر مسعود اندرابی کے مطابق کابل شہر کے ضلع 15 کے علاقے قصابہ میں بدھ کی صبح بارود سے بھری کار نے ایک نجی سیکیورٹی کمپنی کے قافلے کو نشانہ بنایا اور کار ٹکرا کر دھماکہ کرایا۔ افغان وزارت داخلہ کے ترجمان نصرت رحیمی کے مطابق دھماکہ میں 12 افراد جاں بحق اور 20 دیگر زخمی ہوگئے۔ جاں بحق ہونے والوں میں تین بچے جبکہ زخمیوں میں سیکورٹی کمپنی کے چار غیرملکی اہلکار بھی شامل ہیں۔ وزیر داخلہ کے مطابق دھماکہ کا ہدف کینیڈین پرائیویٹ سیکیورٹی کمپنی کا قافلہ تھا جو اہلکاروں کو لے جارہا تھا۔وزیر داخلہ کے مطابق دھماکہ میں سکول جانے والا یک 13 سالہ کمسن بچہ بھی جاں بحق ہوا۔ دھماکہ کے بعد سیکیورٹی فورسز نے علاقہ کا محاصرہ کر لیا اور ہلاک و زخمی افراد کو قریبی ہسپتال منتقل کردیا۔ بتایا جاتا ہے کہ کار بم دھماکہ میں کئی گاڑیوں کو شدید نقصان پہنچا۔تھا۔عینی شاہدین کے مطابق دھماکا صبح ساڑھے 7 بجے کے قریب ہوا جس کے نتیجے میں قریب کھڑی گاڑیوں کو بھی شدید نقصان پہنچا جب کہ دھماکے کے فوری بعد ریسکیو اہلکاروں نے زخمی اور جاں بحق ہونے والوں کو اسپتال منتقل کردیا۔افغان میڈیا کا بتانا ہے کہ جس جگہ دھماکا ہوا وہاں انسداد منشیات کے دفتر سمیت کئی این جی اوز کے دفاتر ہیں۔افغان میڈیا کے مطابق اب تک کسی تنظیم کی جانب سے دھماکے کی ذمہ داری قبول نہیں کی گئی ہے۔

کابل دھماکہ

مزید : صفحہ اول