نوازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست پر سماعت کل تک ملتوی، جواب طلب

نوازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست پر سماعت کل تک ملتوی، جواب طلب
نوازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست پر سماعت کل تک ملتوی، جواب طلب

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکلوانے کے معاملے پر ہائیکورٹ نے وفاق سے تحریری جواب طلب کرتے ہوئے کل تک سماعت ملتوی کردی،جسٹس علی باقر نجفی کی سربراہی میں دورکنی بینچ نے درخواست پر سماعت کی ۔

تفصیلات کے مطابق شہبازشریف نے نوازشریف کا نام غیر مشروط طریقے سے ای سی ایل سے نکلوانے کیلئے ہائیکورٹ میں درخواست دائرکی،درخواست میں وفاقی حکومت،وزارت داخلہ سمیت دیگر کو فریق بنایاگیا ہے،درخواست میں موقف اختیارکیاگیا ہے کہ لاہورہائیکورٹ سے نوازشریف کی ضمانت بیماری کی بنیاد پر منظور ہو چکی ہے،ضمانت منظور ہونے کے باوجود وزارت داخلہ نے نام ای سی ایل سے نہیں نکالا،درخواست میں عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ حکومت پاکستان کی جانب سے چار ہفتے کی پابندی اور ساڑھے سات ارب روپے کے اینڈیمنٹی بانڈز جمع کرانے کی شرط کوغیر قانونی قرار دیتے ہوئے غیر مشروط طور پر نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دیاجائے۔

متن کے مطابق نوازشریف بیمار اہلیہ کو چھوڑکربیٹی کیساتھ پاکستان واپس آئے،درخواست میں مزید کہاگیا ہے کہ کابینہ نے نام ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست پر شرائط عائد کردی ہیں ،عدالتی فیصلے موجود ہیں پلی بارگین کرنے والے مجرموں کے نام ای سی ایل سے نکالنے گئے ۔عدالت میں سماعت کے دوران وفاق کے وکیل نے مخالفت کی اور درخواست کو ناقابل سماعت قرار دیا۔ وکیل نے موقف اپنایا کہ حکومت نے شرائط کیساتھ ایک مرتبہ نوازشریف کو باہر جانے کی اجازت دی ہے ۔ 

مزید : قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور /اہم خبریں