حاملہ خواتین کو مردانہ کمزوری کی دوائی ویاگرا کھلانے کا انتہائی حیرت انگیز فائدہ سامنے آگیا

حاملہ خواتین کو مردانہ کمزوری کی دوائی ویاگرا کھلانے کا انتہائی حیرت انگیز ...
حاملہ خواتین کو مردانہ کمزوری کی دوائی ویاگرا کھلانے کا انتہائی حیرت انگیز فائدہ سامنے آگیا

  



نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) مردوں کے لیے بنائی گئی جنسی قوت کی گولی ویاگرا کا اب حاملہ خواتین کے لیے ایک حیران کن فائدہ سامنے آ گیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق سائنسدانوں نے نئی تحقیق میں بتایا ہے کہ اگر خواتین دوران حمل ویاگرا کھائیں تو اس سے نہ صرف یہ کہ ان کے پیٹ میں موجود بچے کی نشوونما بہتر ہو گی بلکہ بچے کی پیدائش میں بھی آسانی ہو گی۔ ویاگرا کھانے سے زچگی کے وقت میں50فیصد تک کمی ہو جائے گی اور خواتین ایمرجنسی آپریشن کی صعوبت سے بھی بچ جائیں گی۔

آسٹریلوی ریاست کوئنز لینڈ کے میٹر ریسرچ انسٹیٹیوٹ کے سائنسدانوں نے اس تحقیق میں 300خواتین پر تجربات کیے۔ تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ پروفیسر سیلیش کمار کا کہنا تھا کہ ”دوران حمل بچے کی طرف خون کے بہاﺅ میں60فیصد تک کمی آنے کا خطرہ ہوتا ہے۔ خواتین کے ویاگرا استعمال کرنے سے پیڑو کے پٹھوں اور رحم کی طرف خون کے بہاﺅ میں تیزی آتی ہے جس سے ایک طرف بچے کے دماغ کو آکسیجن زیادہ ملتی ہے اوراس کی نشوونما بہتر ہوتی ہے اور دوسری طرف خواتین کی زچگی کا وقت 50فیصد تک کم ہو جاتا ہے۔ “

یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ اسی نوعیت کی ایک تحقیق نیدرلینڈز میں بھی کی گئی تھی، اس تحقیق میں سائنسدانوںنے حاملہ خواتین کو ویاگرا کی زیادہ مقدار دے دی تھی جس کے باعث ان میں سے 11خواتین کے ہاں پیدا ہونے والے بچے پھیپھڑوں کے مسائل میں مبتلا تھے اور چند ہفتے میں ہی ان کی موت واقع ہو گئی، جس کے بعد اس تحقیق کو روک دیا گیا تھا۔

مزید : تعلیم و صحت