رابی پیر زادہ کی ایک اور ویڈیو منظر عام پر آگئی

رابی پیر زادہ کی ایک اور ویڈیو منظر عام پر آگئی
رابی پیر زادہ کی ایک اور ویڈیو منظر عام پر آگئی

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن )ویڈیو لیکس کے بعد گلو کارہ رابی پیرزادہ کا ویڈیو پیغام بھی سامنے آگیا جس کے دور ان انہوں نے اپنی غلطی پر ندامت کا اظہار کرتی ہوئے آنسو بھی بہائے۔ویڈیو پیغام میں انہوں نے کہا کہ اتنے دن کی خاموشی میں جواب ڈھونڈ رہی تھی اپنے اندر سے اور کبھی اللہ سے شکوہ کررہی تھی۔رابی پیرزادہ کا کہنا تھا کہ پھر کسی نے مجھے کہا کہ کسی کے اوپر جب ایسا وقت آتا ہے تو اس کی دو ہی وجوہات ہوتی ہیں یا تو اللہ سزا دیتا ہے یا آزمائش۔ میں نے پوچھا مجھے کیسے پتہ چلے گا کہ مجھے سزا دی گئی ہے یا میری آزمائش ہے، انہوں نے جواب دیا کہ یہ وقت گزر جانے کے بعد بھی میں گناہوں کے دلدل میں دھنس گئی اور اگر میں اللہ کے راستے پر چل پڑی تو یہ میری آزمائش تھی۔

تفصیلات کے مطابق رابی پیر زداہ نے سوشل میڈیا پر اپنے ویڈیو پیغام میں کہا ہے کہ انسان نے کہا کہ میں تھک چکا ہوں  ،جواب آیا کہ اللہ کی رحمت سے نا امید نہ ہونا ،اتنی دن کی خاموشی میں ،میں جواب ڈھونڈ رہی تھی ،اپنے اندر سے کبھی اللہ سے شکوہ کر رہی تھی پھر کسی نے مجھے کہا کہ جب انسان پر کبھی ایسا وقت آتا ہے تو  اس کی دو ہی وجوہات ہوتی ہیں ،یا تو اللہ تعالیٰ سزا دیتا ہے یا پھر اپنے بندے کی آزمائش کرتا ہے،میں نے پوچھا کہ یہ کیسے پتا چلے گا کہ مجھے سزا ملی ہے یا آزمائش ہے؟تو انہوں  نے کہا  کہ اس وقت کے گذرنے کے بعد میں گناہوں کی دلدل میں دھنس گئی تو  یہ سزا ملی،پھر میں نے اللہ تعالیٰ سے رابطہ کر لیا اور اُس کے راستے پر چل پڑی ،جو کچھ میں نے بنایا وہ تنہائی میں بنایا،وہ میرے  اورمیرے اللہ کےدرمیان کی بات ہے،میں اللہ کی مجرم ہوں اور وہ دلوں کے حال جانتا ہے اور میرے آنسوؤں کو سمجھتا ہے ،اللہ تعالیٰ تو کہتا ہے کہ ’’بے شک اللہ اس بات کو معاف نہیں کرتا کہ کسی کو اس کا  شریک بنایا جائے ،اور اس سے کمتر جس کو چاہتا ہے معاف کر دیتا ہے‘‘ایک اور جگہ پر اللہ تعالیٰ نے فرمایا ’’کہہ دو اے میرے وہ بندو  جنہوں نے اپنی جانوں  پر زیادتی کر رکھی ہے ،اللہ کی رحمت سے مایوس مت ہوِ،یقین جانو اللہ سارے گناہ معاف کر دیتا ہے یقینا وہ بخشنے والا اور بہت مہربان ہے‘‘

معروف گلوکارہ کا کہناتھاکہ جب میرا ڈیٹا لیک ہوا اورپورا دنیا میں وائرل ہوگیاتو بہت سارے لوگ میرے پاس کام لے کر آنا شروع ہوگئے،،ٹی وی کمرشل ، فلمیں ،ٹی وی پروگرام،اشتہارات،جیسا میں ہمیشہ کہتی ہوں کہ وائرل چیزوں پر ہمارا رد عمل ہوتا ہے،بہت ساری خواتین نے مجھے سپورٹ کی پیشکش کی کہ آپ کے لیے احتجاج کریں گے کوئی آپ کو کچھ نہیں کہہ سکے گا،ان خواتین میں وہ بھی شامل تھیں جنہوں نے میرا جسم میری مرضی‘ اور ’می ٹو‘ مہم چلائی تھیں لیکن نہیں ’’میرا جسم میرے اللہ کی  مرضی‘‘میں نے اللہ کی نافرمانی کی ہے چاہے وہ تنہائی میں کی ہے ،اللہ تعالیٰ نے مجھے دکھادیا کہ ایک میری چاہت تھی شوبز میں رہنا اور ایک اللہ کی چاہت تھی اپنی راہ پر لگانا۔

انہوں نے ناقدین کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ کتنےمسلمانوں نےمیرے بارے میں بہت سی باتیں کیں،کسی نے کہا کہ اِس نےسستی شہرت کے لئے خود کیا ہو گا ؟کسی نے کہا کہ دیکھ کر ڈیلیٹ کر دوں گا ،کچھ لوگوں نے کہا کہ مودی کے خلاف بولنے کی سزا دی،کچھ نے کہا کہ جو عمران خان کے خلاف نظم پڑھی تھی اس کی سزا ملی ،کچھ نے کہا کہ  آرمی نے کچھ کیا ،کچھ نے کہا کہ اس کواسائلم چاہئے ،بالکل  ٹھیک ہےمیری  جگہ کوئی اور ہوتا وہ آپ جیسے مسلمانوں سے  اسائلم  لے کر چلا جاتا اور بڑے آرام کے ساتھ  اپنی زندگی شروع کر دیتا،میں آپ لوگوں سے بھاگ سکتی ہوں مگر اللہ تعالیٰ سے کہاں بھاگوں گی؟کچھ لوگوں نے تو یہ بھی کہہ دیا کہ رابی نے خود کشی کر لی ہے،اس وقت مجھے احساس ہوا کہ کسی  لڑکی کی کوئی بات معاشرے میں آجائے تو آپ خود اس لڑکی کو گناہوں میں گھسیٹتے  ہیں، ایسا کرنے والے تمام افراد مجرم ہیں۔رابی پیرزادہ نے زارو قطار روتے ہوئے کہا کہ اس معاشرے میں  آپ مسلمان  اللہ کو مانتے ہیں،اللہ  کے رسول ﷺ کو مانتے ہیں، قرآن پاک کو مانتے ہیں، لیکن آپ  ایسے لوگ ہیں جو اللہ کی نہیں مانتے ،ہمارے رسول ﷺ کی نہیں مانتے،قرآن پاک کی  نہیں مانتے۔

معروف اداکارہ کا کہنا تھا کہ ان کی ویڈیوز شیئر کرنے والے دو افراد کو قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکاروں نے پکڑلیاہے،ان لوگوں کو یہاں تو سزا ملے گی لیکن اللہ کے ہاں بھی ایسے لوگ پکڑے جائیں گے ۔انہوں نے کہا کہ مجھے ایسے لوگ بھی ملے جنہوں نے بغیر کسی مطلب اور لالچ کے میری مدد کی، اتنی مدد کی کہ مجھے لگتا تھا جیسے اللہ نے مجھے فرشتے بھیجے ہوں،اللہ نے مجھے نئی زندگی دی ہے اور آج کے بعد میں اپنی زندگی اللہ کو وقف کرتی ہوں۔

مزید : تفریح