’اسلام آباد کا مہنگا ترین مونال ریسٹورنٹ ہماری جگہ پر بنایا گیا ہے‘ پاک فوج نے زمین واپس مانگ لی

’اسلام آباد کا مہنگا ترین مونال ریسٹورنٹ ہماری جگہ پر بنایا گیا ہے‘ پاک فوج ...
’اسلام آباد کا مہنگا ترین مونال ریسٹورنٹ ہماری جگہ پر بنایا گیا ہے‘ پاک فوج نے زمین واپس مانگ لی

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) کیپٹل ڈویلپمنٹ اتھارٹی (سی ڈی اے) کے ممبر پلاننگ ڈاکٹر شاہد محمود نے پارلیمانی کمیٹی کو بتایا ہے کہ اسلام آباد میں مارگلہ ہلز پر بنا مہنگا ترین مونال ریسٹورنٹ پاک فوج کی جگہ پر بنایا گیا ہے اور اب فوج یہ جگہ واپس لینا چاہتی ہے۔

انہوں نے قومی اسمبلی کی ماحولیاتی تبدیلی کی قائمہ کمیٹی کو بتایا کہ 15 سال پہلے سی ڈی اے کو اندازہ نہیں تھا کہ وہ مونال کی تعمیر ملٹری گراس لینڈ پر کر رہے ہیں، لیکن اب فوج نے زمین کی واپسی کا مطالبہ کردیا ہے۔ کمیٹی کو بتایا گیا کہ مارگلہ ہلز نیشنل پارک کی 22 ہزار ایکڑ جگہ دراصل پنجاب حکومت کی ملکیت ہے جس میں سے 5500 ایکڑ زمین آرمی کو دی گئی تھی جس کے باعث سی ڈی اے کے پاس ساڑھے 16 ہزار زمین کا انتظام ہے۔

تازہ ترین سروے میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ پاک فوج کو جو زمین الاٹ کی گئی ہے وہ مارگلہ ہلز نیشنل پارک کے بیچوں بیچ واقع ہے اور اسی جگہ پر مونال ریسٹورنٹ بنایا گیا ہے۔ سی ڈی اے نے مونال ریسٹورنٹ کی تعمیر 2005 میں کی تھی اور اس کا انتظام 10 سالہ لیز پر دیا تھا، اب یہ جگہ خالی کرکے آرمی کے حوالے کردی گئی ہے۔

قائمہ کمیٹی کی چیئرمین منزہ حسن نے استفسار کیا کہ کس نے نیشنل پارک کی ممنوعہ جگہ پر اتنی بڑی تعمیرات کرنے کی اجازت دی تھی ؟ ۔سی ڈی اے کے ڈاکٹر محمود نے بتایا کہ اس وقت کے سی ڈی اے بورڈ نے یہ تعمیرات کرنے کی اجازت دی تھی، ذمہ داروں کو سزا دینے کیلئے کئی بار تحقیقات کی گئیں لیکن ان کا کوئی نتیجہ برآمد نہیں ہوسکا۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد