آزادی مارچ کے حوالے سے سرکاری حفاظتی  انتظامات پر اب تک کتنے کروڑ خرچ ہو چکے ہیں؟تفصیلات جانئے

آزادی مارچ کے حوالے سے سرکاری حفاظتی  انتظامات پر اب تک کتنے کروڑ خرچ ہو چکے ...
آزادی مارچ کے حوالے سے سرکاری حفاظتی  انتظامات پر اب تک کتنے کروڑ خرچ ہو چکے ہیں؟تفصیلات جانئے

  



اسلام آباد (صباح نیوز) مولانا فضل الرحمن کے آزادی مارچ کے دوران اسلام آباد  میں سرکاری حفاظتی  انتظامات پر اب تک  56 کروڑ 76 لاکھ روپے سے زیادہ کا خرچہ ہوگیا ہے جبکہ راستے تاحال بند ہیں،قانون نافذ کرنے والے اداروں کی ذاتی نفری اب تک  اسلام آباد میں موجود ہے جن کے کھانے پینے اور ٹرانسپورٹیشن پر مزید اخراجات جاری ہیں ۔

اسلام آباد میں حفاظتی انتظامات کیلئے 680 کنٹینر کرائے پر لیے گئے ۔ حکام کے مطابق دھرنا جتنا عرصہ بھی چلتا کرایہ طے پایا ایک لاکھ 500 روپے فی کنٹینر یوں اس مد میں 7 کروڑ14 لاکھ روپیہ خرچ ہوا۔ اسلام آباد کی حفاظت کیلئے دیگر شہروں سے پولیس ایف سی  اور قانون نافذ کرنے والے مختلف اداروں  کے 19000 اہلکار طلب کیے گئے۔  انتظامیہ کے مطابق  ان سیکورٹی اہلکاروں کی رہائش ، پٹرول اور کھانے پینے پر یومیہ 3 کروڑ روپے خرچ آیا۔یعنی 15 روز میں 45 کروڑ روپے خرچ ہوئے ۔ آزادی مارچ  کے باعث جڑواں شہروں میں چلنے والی میٹرو بس سروس بھی 31 اکتوبر سے 13 نومبر تک معطل رہی۔ آپریشنل افسر  کے مطابق  میٹرو بس سروس بند ہونے سے یومیہ 33لاکھ روپے کا نقصان ہوا یعنی 14 دن میٹرو بس نہ چلنے سے 4 کروڑ 62 لاکھ نقصان ہوا۔ یوں اب تک وفاقی دارالحکومت کی سیکیورٹی اقدامات  پر 56 کروڑ 76 لاکھ روپے  سے زائد خرچ ہوچکے ہیں ۔سیکیورٹی اہلکاروں کی جو اضافی نفری تاحال شہر میں موجود ہے اس پر مزید اخراجات جاری ہیں۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد