جاپان نے یونیسکو کی سالانہ امداد میں کمی کا عندیہ دیدیا

جاپان نے یونیسکو کی سالانہ امداد میں کمی کا عندیہ دیدیا

ٹوکیو(آن لائن)دوسری عالمی جنگ کے دوران چینی علاقے نانجنگ میں انسانوں کے قتلِ عام کی دستاویزات کو عالمی ورثہ قرار دینے پر جاپانی حکومت مسلسل اپنی خفگی کا اظہار کر رہی ہے۔ جاپانی حکومت نے اقوام متحدہ کے عالمی ادارے یونیسکو کی سالانہ امداد میں کمی کا عندیہ دیا ہے۔ سن 1937 میں نانجنگ پر قبضے کے دوران جاپانی فوج کے ہاتھوں چالیس ہزار سے تین لاکھ تک افراد کے قتلِ عام کا بتایا جاتا ہے۔جاپانی حکومت کے چیف کیبنٹ سیکرٹری یوشیڈا سْوگا کے مطابق ٹوکیو حکومت یونیسکو کے فیصلے کے خلاف ہر سطح پر احتجاج اور ہر پہلو پر غور کر رہی ہے۔ یوشیڈا نے مزید کہا کہ یونیسکو کی امداد کم کرنے کے آپشن پر بھی غور کیا جا رہا ہے۔

مزید : عالمی منظر


loading...