قرآن و سنت کے خلافکوئی قانون نہیں بن سکتا،راغب نعیمی

قرآن و سنت کے خلافکوئی قانون نہیں بن سکتا،راغب نعیمی

لاہور ( نمائندہ خصوصی )جامعہ نعیمیہ کے ناظم اعلیٰ علامہ محمدراغب حسین نعیمی نے کہاہے کہ وطن عزیز میں کوئی بھی قانون قرآن وسنت کیخلاف نہیں بن سکتاحکمران قرآن وحدیث کے متفقہ مسائل سے چھیڑخانی کریں گے توان پراللہ کی طرف سے وبال نازل ہوگاپاکستان اسلامی مملکت ہے اس میں کسی طورپر اسلامی معاملات اورمتفقہ نظریات پر غیر ملکی ایجنڈاقبول نہیں کیا جاسکتا۔وطن عزیز میں گزشتہ چندسالوں کے دوران اسلام مخالف بنائے گئے قوانین فی الفور ختم کئے جائیں ان خیالات کااظہار انہوں نے گزشتہ روز جامعہ نعیمیہ میں علماء ومشائخ کے منعقدہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اجلاس میں شیخ الحدیث مفتی عبدالعلیم سیالوی،،شیخ القرآن علامہ غلام نصیرالدین چشتی،مولانامحبوب احمدچشتی،مفتی محمدعمران حنفی،مولاناڈاکٹرسلیمان قادری،مفتی محمدہاشم ،مفتی محمدعارف حسین،صاحبزادہ پیر سیدزین العابدین شاہ ، مفتی فیصل ندیم،قاری محمدرفیق نقشبندی،قاری محمد ذوالفقارنعیمی،قاری محمداشفاق قصوری،قاری محمدمنظور حسین،مولانا محمدامیرقادری،قاری محمدفیاض احمد،قاری محمدعبدالرحمن جامی،مولانا ارشدجاوید ،مفتی محمدمدنی سمیت اساتذہ ا و ر معلمین بھی شریک تھے۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے علامہ راغب حسین نعیمی نے مزید کہاکہ تعلیم ا ورتحقیق کاراستہ اختیارکرکے دنیاکو’’امن کا گہوراہ‘‘ بنایاجاسکتاہے۔اشاعت دین اورفروغ علم کیلئے مدارس دینیہ کاکردارتاریخ کاروشن باب ہے تاہم دینی تعلیم کیساتھ جدید علوم سے آشنائی وقت کی عالمی وقومی ضرورت ہے پاکستان تاریخ کے نازک دورسے گزررہاہے۔علماء ومشائخ محراب ومنبر اورسیاسی قیا د ت ایوان اقتدار میں رواداری کوفروغ دیں۔ضمنی الیکشن میں امیدواروں کانتائج کوتسلیم کرناملکی سیاست کے لئے نیک شگون ہے جیت ا و ر ہار جمہوریت کاحصہ ہے ملکی ترقی وخوشحالی کاسفرجاری رکھاجائے۔محرم الحرام میں امن کی فضاء کوبحال رکھنے کیلئے قانون نافذکرنیوالے اداروں کی طرف سے جاری کردہ ’’ضابطہ اخلاق‘‘پرعملدآمدیقینی بنایا جائے تکفیری سوچ اورفرقہ ورایت کارجحان مسلم معاشروں کیلئے زہرقاتل ہے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...