صنعتی ملازمین کے سوشل سکیورٹی کنٹری بیوشن استثنیٰ کی درخواست پر فیصلہ محفوظ

صنعتی ملازمین کے سوشل سکیورٹی کنٹری بیوشن استثنیٰ کی درخواست پر فیصلہ محفوظ

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے 3ہزار سے زائد تنخواہ لینے والے صنعتی ملازمین کے سوشل سکیورٹی کنٹری بیوشن جمع کرانے سے استثنیٰ دینے سے متعلق درخواست پر فیصلہ محفوظ کر لیا ۔مسٹر جسٹس عباد الرحمن لودھی نے نیسلے کمپنی کی درخواست پر سماعت کی، کمپنی کے وکلا ء نے موقف اختیار کیا کہ سوشل سکیورٹی آرڈیننس کے تحت کمپنی ایسے ملازمین کی 6 فیصد کنٹری بیوشن فیس جمع کرانے کی پابند نہیں ہے ۔ پنجاب حکومت کی طرف سے اسسٹنٹ ایڈووکیٹ جنرل انوار حسین نے موقف اختیار کیا کہ پاکستان انٹرنیشنل لیبر آرگنائزیشن کا ممبر ہے اور عالمی کنونشن 1962ء کی دفعہ 18کے تحت کمپنیوں پر لازم ہے کہ وہ اپنے ملازمین کا کنٹری بیوشن جمع کرائیں گی ، آئین کے آرٹیکل 38(سی )کے تحت حکومتیں اپنے اپنے صوبوں میں سوشل سکیورٹی کا نظام رائج کرنے کی پابندہیں۔عدالت نے تفصیلی دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کر لیا۔

فیصلہ محفوظ

مزید : صفحہ آخر


loading...