چناب نگر کے نوجوان کی نظربندی کالعدم، رہا کرنے کا حکم

چناب نگر کے نوجوان کی نظربندی کالعدم، رہا کرنے کا حکم

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے اشتعال انگیزی کے الزام میں چناب نگر کے نوجوان شہری کی نظربندی کالعدم کرتے ہوئے اسے رہا کرنے کا حکم دے دیا۔مسٹرجسٹس شاہد حمید ڈار کی سربراہی میں دور کنی بنچ نے نظربند نوجوان اسامہ رحیم کی والدہ یاسمین کنول کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کے وکیل بنچ کوبتایا کہ ڈی سی او چنیوٹ نے چناب نگر کے مخالفین کے کہنے پر اس کے بیٹے پر اشتعال انگیز ی پھیلانے میں ملوث ہونے کا الزام لگا کر نظر بند کر دیا ہے۔ نوجوان کی بے گناہی ثابت کرنے کے لئے اہل علاقہ کے بیان حلفی بھی جمع کرائے گئے ہیں مگر اسے رہا نہیں کیا جا رہا۔ ڈی سی او چینوٹ کی طرف سے عدالت میں جواب پیش کرایاگیا ، عدالت نے سرکاری وکیل سے نوجوان کے اشتعال انگیزی میں ملوث ہونے کے ثبوتوں بارے استفسار کیا مگر سرکاری وکیل اور ڈی سی او چنیوٹ کوئی تسلی بخش جواب نہیں دے سکے ۔

رہائی حکم

مزید : صفحہ آخر


loading...