افغانستان ، غزنی پر 2ہزار طالبان کا کئی اطراف سے حملہ، گمسان کی لڑائی جاری

افغانستان ، غزنی پر 2ہزار طالبان کا کئی اطراف سے حملہ، گمسان کی لڑائی جاری

کابل(آئی این پی)افغانستان کے شہر غزنی کے اطراف میں افغان فوج اور طالبان جنگجوؤں کے درمیان لڑائی نے شدت اختیار کر لی،سیکورٹی فورسز نے طالبان کا حملہ ناکام بناتے ہوئے 61 جنگجوؤں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا ہے ۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق مقامی حکام کا کہنا ہے کہ طالبان جنگجوؤں نے ایک ساتھ کئی جانب سے صوبائی دارالحکومت غزنی پرحملہ کیا۔غزنی شہر افغانستان کے دارالحکومت کابل کے جنوب میں تقریباً 150 کلو میٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔صوبے کے نائب گورنر محمد علی احمدی کا کہنا ہے کہ غزنی شہر پر تقریباً دو ہزار طالبان جنگجوؤں نے کئی جانب سے حملہ کیا، طالبان ’کے ساتھ شدید لڑائی کے دوران ان کا فاصلہ غزنی شہر سے محض پانچ کلو میٹر دور تک ہی رہ گیا تھا تاہم افغان فوج کی جانب سے زبردست مزاحمت کے باعث طالبان کو پیچھے دھکیل دیا گیا ہے۔‘تاہم آزاد ذرائع سے اس بات کی تصدیق نہیں ہوسکی ہے۔ سیکورٹی فورسز نے فوری کارروائی کرتے ہوئے 37 طالبان کو ہلاک کر دیا۔ افغان حکام کے مطابق شہر کے دیگر علاقوں میں جھڑپوں کے دوران مزید 12 طالبان ہلاک ہو گئے۔ وہاں صوبہ فرح میں سیکورٹی فوسز سے جھڑپوں میں مزید 12 طالبان ہلاک ہو گئے۔ فورسز نے بھاری مقدار میں اسلحہ اور گولہ بارود برآمد کر لیا۔یہ واقعہ افغانستان کے شمالی شہر قندوز پر طالبان کی جانب سے حملے کے دو ہفتے بعد پیش آیا ہے۔گذشتہ چند روز سے طالبان اور افغان فوج کے درمیان جھڑپوں کا سلسلہ جاری تھا۔ تاہم حکام کا کہنا ہے کہ صورت حال سے نمٹنے کے لیے قریبی صوبوں سے مدد کے لیے مزید فوج پہنچ گئی تھی۔

افغانستان

مزید : صفحہ آخر


loading...