بنک ٹرانزیکشن ٹیکس، مذاکرات میں تاخیر پر تاجر تقسیم ہو گئے

بنک ٹرانزیکشن ٹیکس، مذاکرات میں تاخیر پر تاجر تقسیم ہو گئے

لاہور (کامرس رپورٹر )وزارت خزانہ اور ایف بی آر کی جانب سے بنک ٹرانزیکشن ٹیکس پر تاجروں و صنعتکاروں کے مابین گزشتہ ایک ماہ سے جاری مذاکرات تاحال کامیاب نہ ہو سکے ہیں سات بار ہو نے والے مذاکرات میں جہاں تاجر تنظیموں کے رہنماء شر یک ہوئے وہیں فیڈریشن اور چیمبرز کے عہدیداران بھی اس ٹیکس کے خاتمہ کے لیے سر توڑ کو شش کر چکے ہیں ۔بنک ٹرانزیکشن ٹیکس مذاکرات میں تاخیر پر تاجر دھڑے بھی تقسیم ہو گئے ہیں ۔انجمن تاجرا پاکستان (خالد پرویز گروپ)نے ود ہولڈنگ ٹیکس پر ملک بھر کے تاجر نمائندوں کا ہنگامی اجلاس آج کو ئٹہ میں بلا لیا ہے جبکہ آل پاکستان انجمن تاجران (میر گروپ)آج وزارت خزانہ کے ساتھ ود ہولڈنگ ٹیکس کے حوالے سے مذاکرات کے ٹیبل پر ایک بار پھر بیٹھے گادوسر ی جانب قومی تاجر اتحاد (اظہر گلشن گروپ)نے ود ہو لڈنگ ٹیکس کے مکمل خاتمہ تک مذاکرات میں نہ بیٹھنے کا عندیہ دیا ہے ۔ جس کے لیے قو می تاجر اتحاد پنجاب کے سینئر وائس چیئر مین جاوید اقبال بٹ نے پر یس کانفر نس کر تے ہوئے بنک ٹرانزیکشن ٹیکس کے خلاف حکو مت کو انتباہ کیا ہے کہ اگر حکو مت نے اپنا تاجر دشمن فیصلہ واپس نہ لیا تو قو می تاجر اتحاد کے پلیٹ فارم سے ملک بھر میں احتجاج کا سلسلہ شروع کر دیا جائے گا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اگر حکو مت نے تاجر رہنماؤں کی رائے سے اتفاق کیا تو یہ ٹیکس ملک بھر میں نافذ ہو جائے گا اور اگر مذاکراتی دور آج پھر نا کام رہا تو آل پاکستان انجمن تاجران بھی مذاکرات کے عمل سے باہر نکل کر حکو مت کے خلاف سراپا احتجا ج بن جائے گی۔ دوسر ی جانب انجمن تاجران پاکستان کے مرکزی صدر خالد پر ویز حکو متی مذاکرات کو فراڈ قرار دیتے ہوئے آ ج ود ہو لڈنگ ٹیکس کے خلاف ملک گیر کنو نشن کو ئٹہ میں بلا لیا ہے جہاں پر سندھ ، سر حد ، بلو چستان اور پنجاب سمیت ملک بھر سے تاجر نمائندے شر کت کے لیے پہنچ گئے ہیں جس کے پیش نظر آج ود ہو لڈنگ ٹیکس کے خلاف سخت لائحہ عمل کا اعلان بھی متو قع ہے

مزید : صفحہ اول


loading...