نوشہرہ ،مسلم لیگ ن کے کارکنوں کی بغاوت خوشامدی اور قبغہ گروپ ختم کرنیکا مطالبہ

نوشہرہ ،مسلم لیگ ن کے کارکنوں کی بغاوت خوشامدی اور قبغہ گروپ ختم کرنیکا ...

نوشہرہ(بیورورپورٹ) پاکستان مسلم لیگ ن ضلع نوشہرہ کی تمام تنظیموں نے صوبائی اور ضلعی تنظیموں کے خلاف علم بغاوت کردیا صوبہ بھر میں انٹرپارٹی انتخابات کا مطالبہ خوشامدی اور قبضہ گروپ کو ختم کیاجائے 2013کے انتخابات کے بعد مسلم لیگ ن اپنی ہی مرکزی حکومت کے باوجود زوال پزیر اور کارکن مایوسی کے شکار پختون بلٹ کو نظرانداز کرنے سے مسلم لیگ ن کا خیبرپختونخوا میں شیرازہ بکھرجائے گا ترقیاتی فنڈز پنجاب اور ہزار ڈویژن میں خرچ کیاجارہا ہے اگر پختون بلٹ میں کارکنوں اور ضلعی قائدین کو مزید دیوار سے لگایا گیا تو ڈی چوک اسلام آباد میں اپنے حق اور پختون بلٹ میں مسلم لیگ کو بچانے کیلئے دھرنا دیں گے ان خیالات کااظہار پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما سابق امیدوار این اے 6پیرذوالفقار باچا ،ممبرضلع کونسل حیدر خان ، ممبر تحصیل کونسلر حاجی محمد ایوب، طاہر یوسفزئی، ارشاد قریشی، نبی آمین ،نعیم عباس ،یوتھ ونگ کے سینئر نائب صدر طاہرسالار اور ضلع بھر کے مقامی تنظیموں کے عہدیداروں نے ایک مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ 2013کے عام انتخابات میں این اے 6پر مسلم لیگ کو 35ہزار ووٹ ملے تھے اسی طرح صوبائی اسمبلی کے امیدواروں نے بھی دوسری پوزیشن حاصل کی تھی لیکن مرکز میں حکومت بننے کے بعد کارکن مسلسل نظرانداز ہوتے رہے جس کی بناء پر بلدیاتی انتخابات میں ایک ضلع اور تحصیل کی نشست پر کامیابی ملی تو انتہائی افسوسناک اور لمحہ فکریہ ہے انہوں نے کہا کہ پختون بلٹ کے کارکنوں اور قائدین کو مسلسل نظرانداز کیاجارہا ہے اور تمام ترتوجہ پنجاب اور ہزارہ ڈویژن کو دی جارہی ہے کارکنوں کی مسلسل نظراندازی پر حمزہ شہباز شریف، گورنر خیبرپختونخوا سردار مہتاب ، صوبائی صدر پیرصابرشاہ، جنرل سیکرٹری رحمت سلام خٹک اور دیگر قائدین سے باقاعدہ ملاقات کرکے اپنے مسائل سے آگاہ کیا لیکن کوئی شنوائی نہ ہوسکی انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کے مشیر امیر مقام کو حقیقی معنوں میں اختیارات دئیے جائیں کیونکہ ان کی قائدانہ صلاحیتوں کی وجہ سے انہوں نے ضلع سوات اور ضلع شانگلہ اور ٹاؤن فور پشاور میں انتخابات جیت کر اپنے ناظمین منتخب ہوئے انہوں نے مزید کہاکہ ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ خیبرپختونخوا پختون بلٹ میں انٹرا پارٹی الیکشن کرائے جائیں تاکہ باصلاحیت اور مخلص قیادت سامنے آئیں اگر ایک ماہ کے اندر اندر ہمارے مطالبات منظور نہ ہوئے تو ڈی چوک اسلام آباد میں دھرنا دیں گے۔

مزید : پشاورصفحہ اول


loading...