قوموں کی ترقی کاراز علم کے حصول میں پوشیدہ ہے،قاضی ظہور

قوموں کی ترقی کاراز علم کے حصول میں پوشیدہ ہے،قاضی ظہور

راولپنڈی (جنرل رپورٹر) قوموں کی ترقی کاراز علم کے حصول میں پوشیدہ ہے نجی شعبہ فروغ تعلیم کیلئے حکومت کا ہاتھ بٹاتا رہا ہے تمام بچوں کو سکولوں میں لانا ہم سب کی ذمہ داری ہے غیر رجسٹرڈ تعلیمی ادارے 30دن کے اندر اندررجسڑیشن کروا لیں۔ ان خیالات کا اظہار ای ڈی او ایجوکین قاضی ظہورالحق نے گزشتہ روزایپسما اور محکمہ تعلیم کے باہمی اشتراک سے گورنمنٹ گرلز ہائی سکول نمبر 1باغ سرداراں میں نجی و محکمہ تعلیم کے باہمی اشتراک منعقدہ سمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ سمینار کے دیگر مہمانوں میں ایپسما راولپنڈی ڈویثر ن کے صدر ابرار احمد خان ،ڈی ای او ایلیمنٹری شاہدہ ہاشمی اور ڈی ای او ایم سی سکولز چوہدری شہباز احمد کے علاوہ راولپنڈی یونیسیف کے نمائندوں شرکت کی۔ اپنے خطاب میں قاضی ظہورالحق نے کہا کہ سرکاری اور نجی شعبہ مل کر تمام بچوں کو سکولوں میں داخل کرائیں جو تعلیم سے محروم ہیں انہوں نے نجی تعلیمی شعبہ کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ پبلک پرائیویٹ سیکٹر پارٹنر شپ موجودہ وقت کی اہم ضرورت ہے ملک کے تقریباً نصف تعلیمی ادارے نجی تعلیمی اداروں سے وابستہ ہیں فروغ تعلیم میں نجی شعبہ کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں انہوں نے پرائیویٹ اداروں تعلیمی اداروں کی فیسوں کے بارے میں آرڈیننس کا کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ حکومت پنجاب نے ہر ضلع میں کمیٹی بنائی ہے ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹی قائم کر دی ہے جس میں ڈی سی او چیئر پرسن، ای ڈی او ایجوکیشن سیکرٹری جبکہ بی ایم او پرائیویٹ تعلیمی شعبہ اور والدین ممبر کے طور پر کام کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ تمام تعلیمی ادارے 30دن کے اند ر اپنی رجسٹریشن کر والیں اس کے بعد آرڈیننس کی روشنی میں غیر رجسٹرڈ سکولوں کے مالکان کو بھاری جرمانے کیے جائیں گے انہوں نے راولپنڈی میں غینگی کی بگڑتی ہوئی صورتحال کا ذکر کرتے ہوئے کہا نجی سکولز مالکان کو غیر معمولی اقدام اٹھانے پر زور دیا اپنے خطاب میں ابرار احمد خان نے کہا کہ حکومت پنجاب کے جاری کردہ آرڈیننس کے خلاف ہمارے تحفظات ہیں مرکزی ایسوسی ایشن نے اس آرڈیننس کے خلاف لاہور ہائیکورٹ سے حکم امتناعی لیا ہو ا ہے اور عدالت نے 5نومبر کو تمام فریقین کو طلب کیا ہو اہے ، انہوں نے مزید کہا کہ نجی تعلمی ادارے محکمہ صحت کی ہدایات پر عمل درآمد کرتے ہوئے اپنی اور بچوں کی صحت کی حفاظت کو یقینی بنائیں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...