ڈیرہ ،گمبیلا ٹوروڈ کی تعمیر میں بے قائدگیوں کی تحقیقات کا آغاز

ڈیرہ ،گمبیلا ٹوروڈ کی تعمیر میں بے قائدگیوں کی تحقیقات کا آغاز

ڈیرہ اسماعیل خان(بیورورپورٹ)نیب نے پی پی پی دورمیں گمبیلاٹوڈیرہ روڈکی تعمیرمیں ناقص میٹریل استعمال ہونے پرتحقیقات کاآغازکردیا۔نیب نے موقع پرروڈکامعائنہ کرکے مکمل ریکارڈطلب کرلیا۔تفصیلات کے مطابق ڈپٹی ڈائریکٹرنیب کی قیادت میں نیب کی چاررکنی ٹیم نے قریشی موڑ(ڈیرہ اسماعیل خان)ٹوگمبیلا(لکی مروت)روڈجوپاکستان پیپلزپارٹی دورحکومت میں کروڑوں روپے کی خطیرلاگت سے تعمیرہواتھاکامعائنہ کیا۔روڈکوحسنین اینڈکمپنی نے تعمیر کیاتھامذکورہ کمپنی کے بارے زورعام تھاکہ سابقہ وزیراعظم یوسف رضاگیلانی کے دست راست کی تھی۔روڈسال2010ء کے سیلاب میں بہہ گیاتھامگربعدازاں اس کی تعمیروترقی نہیں کی گئی۔روڈکے بارے میں بتایاجاتاہے کہ نیشنل ہائی وے اتھارٹی این ایچ اے نے اس پراجیکٹ کیلئے علیحدہ ڈائریکٹربھی بٹھایاتھامگرملی بھگت سے عظیم منصوبہ سے عوام اورعلاقہ مستفیدنہ ہوسکا۔سابق ڈپٹی سپیکرقومی اسمبلی فیصل کنڈی نے اس روڈمیں ناقص میٹریل استعمال ہونے کی اطلاعات اعلیٰ حکام کودیں جس پرمعائنے بھی ہوئے مگرکوئی کارروائی نہیں ہوئی۔کثیرخطیرسرمایہ سے تعمیرہونیوالے روڈسے حکومت کولگنے والے نقصان کے ٹیکے کاتخمینہ لگانے کیلئے نیب کی ٹیم ڈیرہ آگئی ہے۔انوہں نے سابقہ پی ڈی جہانگیراعوان اورموجودہ پی ڈی فریداللہ کوبھی طلب کیاہے۔نیب نے فریداللہ سے تمام ریکارڈبھی مانگاہے جبکہ حسنین کمپنی کے بڑوں کوبھی ڈیرہ بلایالیاہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...