خرد برد ،نیب نے باجوڑ کے سرکاری افسر کو گرفتار کرلیا

خرد برد ،نیب نے باجوڑ کے سرکاری افسر کو گرفتار کرلیا

پشاور( کرائمز رپوروٹر )قومی احتساب بیورونے محمدحسن کوگرفتارکرلیا۔مبینہ طورپرمحمدحسن نے ہاؤسنگ یونیفارم اسسٹنٹ سبسڈی پراجیکٹ برائے باجوڑایجنسی میں تقریباً40ملین روپے کی خردبردکی ہے۔تفصیلات کے مطابق ہاؤسنگ یونیفارم اسسٹنٹ سبسڈی پراجیکٹ (HUASP) کے تحت USAIDکی تعاون سے دہشت گردوں کیخلاف آپریشن میں جن بے گھرافرادکے گھروں کونقصان پہنچاتھاانہیں معاوضہ اداکرناتھا،جن کے گھرمکمل طورپرتباہ ہوگئے تھے انہیں4لاکھ روپے اورجن کے گھروں کوجزوی نقصان پہنچاتھاانہیں ایک لاکھ60ہزارروپے فراہم کیئے گئے تاہم مذکورہ پراجیکٹ کے تحت 10ہزارافرادکو2.5(ڈھائی)بلین روپے دیئے گئے۔تفتیش کے دوران انکشاف ہواکہ ملزم نے ایف ڈی ایم اے حکام کی ملی بھگت سے جعلی وغیرمستحق افرادکوادائیگی کی فہرست میں شامل کیا تھا،بینک ریکارڈکے مطابق غیرمستحق افرادکی تمام رقم ملزم کے بینک اکاؤنٹ میں جمع کیاگیاہے جوملزم کیخلاف اشارہ کرتاہے کہ ملزم نے خوداوراپنے ایف ڈی ایم اے حکام کومالی فائدہ دیاہے۔یہاںیہ امرقابل ذکرہے کہ FDMAکے سابقہ ڈائریکٹرجنرل ارشدخان اوراسسٹنٹ ڈائریکٹر عرفان اللہ کوبھی ایسے ہی کیس میں گرفتارکیاگیاہے۔نیب حکام کیس کی مزیدجان پڑتال کررہے ہیں اوراہم انکشافات متوقع ہیں۔ملزم محمدحسن کوجسمانی ریمانڈکیلئے احتساب عدالت میں پیش کیاجائیگا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...