تحصیل ثمر باغ کیلئے 2 کروڑ 34 لاکھ سے زائد کا بجٹ منظور

تحصیل ثمر باغ کیلئے 2 کروڑ 34 لاکھ سے زائد کا بجٹ منظور

تیمرگرہ( بیو ر و رپو ر ٹ ) تحصیل ناظم ثمر باغ سعید احمد پاچہ نے تحصیل ثمرباغ کا سال 2015-16 کیلئے 2کروڑ 34لاکھ 41ہزار 972روپے کا خطیر غیر ترقیاتی بجٹ منظور کر دیا،گذشتہ روز تحصیل کمپلیکس ثمر باغ میں زیر صدارت تحصیل نائب ناظم بشیر الحق بجٹ اجلاس منعقد ہوا جس میں تحصیل ثمر باغ کے منتخب تحصیل کونسلران نے شرکت کی اجلاس کے دوران تحصیل ناظم سعید احمد پاچہ نے سال 2015-16کیلئے 2 کروڑ 34لاکھ 41ہزار 972روپے کا خطیر بجٹ پیش کر دیا اور کہا کہ مذکورہ بجٹ تنخواہوں سے لیکر دفتری اخراجات تک 41غیر ترقیاتی دفتری سرگرمیوں پر خرچ کئے جاینگے، بجٹ کے دوران تحصیل کونسلر ان سربلند خان اور فضل معبود نے چار کول ،تنخواہوں اور دیگر اخراجات پر نکتہ اعتراض اٹھایا اور تحصیل ناظم سے مطالبہ کیا کہ دفتر کے اخراجات کو کم کرتے ہوئے مذکورہ کاموں کی مد میں پیش کیا جانے والا بجٹ عوامی فلاح و بہبود پر خرچ کیا جائے اور اس کے ساتھ ساتھ یہ بھی اعتراض کیا کہ تحصیل فنڈ میں اس وقت محدود فنڈ موجود ہے جبکہ میونسپل کمیٹی کے بہت سارے پیسے اڈہ ٹھیکہ داران کو بقایا ہے تاہم تحصیل ناظم نے کونسلران کے تحفظات ختم کرانے کی یقین دہانی کرا دی اور کہا کہ جن ٹھیکہ داران کے ذمہ پیسے واجب الاداء ہیں وہ جلد از جلد بقایہ پیسے تحصیل ناظم کے دفتر میں جمع کراینگے اور اگر انہوں نے رقم جمع نہ کرائی تو ایسے ٹھیکہ داران کے لائسنس کینسل کر دیئے جاینگے اور وہ ٹی ایم اے کے کسی بھی ٹینڈر میں بیٹھنے کے اہل نہ ہونگے ،تسلی کے بعد منتخب تحصیل کونسلران نے اتفاق رائے سے تحصیل کونسل ثمر باغ کا بجٹ منظور کر لیا، بجٹ مباحثہ کے دوران تحصیل ناظم نے خصوصی طور پر خواتین کونسلران کے حقوق اور نمائندگی پر بات کی اور تحصیل کمپلیکس ثمر باغ میں خواتین کونسلران کیلئے علیحدہ باپردہ کمرہ کی منظوری بھی دی اور کہا کہ خواتین کسی بھی میدان مین مردوں سے پیچھے نہیں اس لئے انہیں بھی بھر پور خدمت کا موقع دیا جائے گااور آئندہ ترقیاتی بجٹ میں ان کو خصوصی حصہ دیا جائے گا جو منتخب خواتین کونسلران اپنی مرضی سے خواتین کے فلاح و بہبود پر خرچ کرے گی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...