جنوبی پنجاب میں لوڈشیڈنگ کا سلسلہ عروج پر پہنچ گیا

جنوبی پنجاب میں لوڈشیڈنگ کا سلسلہ عروج پر پہنچ گیا

ٹھٹھہ صادق آباد ‘ حویلی کورنگا ‘ باگڑ سرگانہ ‘ میلسی ‘ کوٹ ادو ‘ شہر سلطان ‘ شادن لُنڈ (بقیہ نمبر21صفحہ12پر )

‘ احمد پور شرقیہ ‘ رحیم یار خان ( نمائندگان ) جنوبی پنجاب میں بجلی کی غیر اعلانیہ طویل لوڈشیڈنگ کا سلسلہ عروج پر پہنچ چکا ہے ۔ حویلی کورنگا سے نمائندہ خصوصی کے مطابق کوٹ اسلام ونواح میں لوڈشیڈنگ کے دورانیہ میں کئی گنا اضافہ ہوگیا ہے جس سے کاروبار ٹھپ ہوکر رہ گئے ہیں سار ی رات اکثر بجلی کا غائب رہنا معمول بن چکا ہے ۔ ٹھٹھہ صادق آباد سے نمائندہ خصوصی کے مطابق واپڈاسکینڈ جہانیاں کی طرف سے ٹھٹھہ صادق آباد نواحی علاقوں میں بجلی کی 18گھنٹوں کی طویل غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے، شہری شدیدپریشان ہیں،شہریوں،کسانوں نے شدیداحتجا ج کیاہے۔ میلسی سے نمائندہ پاکستان کے مطابق میلسی میں بجلی کی بدترین لوڈشیڈنگ سے شہری عاجزآگئے شہرمیں پانی کی قلت پیداہوگئی اورکاروبارزندگی معطل ہوکررہ گیا۔ کوٹ ادو سے تحصیل رپورٹر کے مطابق واپڈا کی جانب سے لائن لاسز پورے کرنے کیلئے ہر ماہ کے آخری 10یوم بجلی کی طویل لوڈ شیڈنگ کی جاتی ہے اب جبکہ مہینے کے آخری دنوں میں محرم الحرام شروع ہو رہا ہے تو واپڈا نے لائن لاسز پورے کرنے کیلئے طویل فورس لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ ابھی سے شروع کر دیا ہے، ہر گھنٹے بعد 3،3گھنٹوں کیلئے بجلی بندش سے کاروبار مفلوج ہو کر رہ گئے ہیں، کوٹ ادو کے اکثر دیہی علاقوں میں بجلی تمام دن غائب ہونا معمول بن گیا ہے جبکہ شہر کے ملحقہ علاقوں دائرہ فیڈر،نور شاہ روڈ،بخاری روڈ،محلہ گانمن شاہ،مویشی منڈی روڈ،نقد آباد،محلہ نورے والا،تونسہ موڑ سمیت کئی علاقوں میں 16سے18گھنٹے کی طویل لوڈ شیڈنگ کی جا رہی ہے جسکی وجہ سے صارفین انتہائی پریشانی کا شکار ہیں۔ شہر سلطان سے نامہ نگار کے مطابق شہر سلطان میں تاریخ کی بدترین لوڈشیڈنگ کیخلاف شہریوں نے سخت احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ غیراعلانیہ بجلی کی طویل بندش نے گھروں میں پینے کیلئے پانی اور نماز کیلئے وضو کر نے کی بھی قلت پیدا کر رکھی ہے ۔ شہریوں نے چیئرمین واپڈا ‘ وزیر پانی و بجلی ‘ کمشنر ڈیرہ غازی خان اور ڈی سی او مظفر گڑھ سے واپڈا کی غیر اعلانیہ طویل لوڈشیڈنگ کیخلاف کاروائی کا مطالبہ کیا ہے ۔ شادن لُنڈ سے نامہ نگار کے مطابق کئی دنوں سے شادن لُنڈ فیڈر سے بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے ‘ جبکہ شادن لُنڈفیکٹری اورصعنتی فیڈرہے حکومت پنجاب کے اعلان کے مطابق 31دسمبر2015تک صعنتی ایریا میں لوڈشیڈنگ نہیں کی جائے گی اس کے باوجود بھی واپڈا اہلکاروں کی بدمعاشی کی حد ہو گئی ہے جب فیکٹری مالکان واپڈا والوں کو بھتہ نہیں دیتے تو یہ واپڈا اہلکار لوڈشیڈنگ کا سلسلہ شروع کر دیتے ہیں۔ باگڑ سرگانہ سے نمائندہ پاکستان کے مطابق سب ڈویژن واپڈا سرائے سدھو میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 20 گھنٹے تک پہنچ گیا جس کیوجہ سے کاروبار زندگی ٹھپ ہو کر رہ گئے ۔ احمد پور شرقیہ سے سٹی رپورٹر کے مطابق کا ٹن سیز ن شروع ہو تے ہی غیر اعلا نیہ لو ڈشیڈنگ میں ا ضافہ ہو گیا ہے ۔ اور بغیر شیڈول گھنٹوں بجلی بند رہنا معمو ل بن چکا ہے ۔ کا ٹن جنر ز ایسو سی ایشن کے صدر چو ہد ری خا لد جاوید اور جنر ل سیکر ٹری میاں نوید ایاز نے بتا یا کہ بجلی کے آنے اور جا نے کا کو ئی ٹائم مقرر نہیں ہے ۔ اور مین سپلا ئی بند ہو نے کا بہا نہ کر کے دس سے بارہ گھنٹے بجلی بند کی جا رہی ہے ۔ ۔ اُنہو ں نے کہا کہ کاٹن فیکٹریوں کو بلا تعطل بجلی فراہم کی جا ئے ۔ رحیم یار خان سے نمائندہ خصوصی کے مطابق واپڈاحکام کی طرف سے بجلی کی طویل غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کے ساتھ ساتھ باربارٹرپنگ کاسلسلہ جاری ہے جس سے صارفین کی لاکھوں روپے مالیتی الیکٹرونکس اشیاء جل گئی ہیں اوردکانداروں‘ مل مالکان ‘ ورکشاپس اورطالب علموں کی مشکلات میں اضافہ ہوگیاہے باربارٹرپنگ سے وولٹیج کی کمی بیشی سے صارفین ذہنی مریض بن گئے ہیں صارفین محمدنعیم‘ شکیل احمد‘ محمدعمران‘ خالدحسین‘ محمداشرف‘ محمدسلیم ودیگر نے احتجاج کیا ہے ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...