چین نے بھارتی مخالفت کے باوجود تبت میں دنیا کا سب بڑا ڈیم فعال کر دیا

چین نے بھارتی مخالفت کے باوجود تبت میں دنیا کا سب بڑا ڈیم فعال کر دیا
چین نے بھارتی مخالفت کے باوجود تبت میں دنیا کا سب بڑا ڈیم فعال کر دیا

  


بیجنگ(اے این این )چین نے بھارتی مخالفت کے باوجود تبت میں دنیا کا سب بڑا ڈیم فعال کر دیا،زام ڈیم سالانہ25لاکھ میگاواٹ آّورز کی پیداواری صلاحیت کا حامل ہے۔ایک بھارتی اخبار کی رپورٹ کے مطابق چین نے تبت میں دریائے برہم پترا پر 1.5بلین ڈالر کی لاگت سے زام ہائیڈر و پاور پراجیکٹ فعال کردیا ۔

چین کے سب سے بڑے ہائیڈر و پاور کنٹریکٹر گیژھوبا گروپ کے ترجمان نے چین کے سر کاری خبر رساں ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ ہائیڈرو پاور کے تمام 6سٹیشن یونٹس کو منگل کے روز پاور گرڈ سے منسلک دیاگیا ۔اس پاور سٹیشن سے سالانہ 2.5ارب کلو واٹ آوورز (25لاکھ میگا واٹ)بجلی پیدا کی جاسکے گی ۔یہ پاور سٹیشن گیاکا کاﺅنٹی ، شنان پریفیکچر میں واقع ہے ۔زام ہائیڈرو سٹیشن ژانگ مو ہائیڈرو پاور سٹیشن کے نام سے بھی جانا جاتاہے ۔یہ ڈیم دنیا کاسب سے اونچااوراپنی نوعیت کا سب سے بڑا ڈیم ہے ۔

واضح رہے کہ اس ڈیم پر سندھ طاس معاہدے کی خلاف ورزی کے مرتکب بھارت نے بھی اپنے تحفظات کا اظہار کیا تھا کہ چین کے ساتھ تنازعہ کی صورت میں چین اس کا پانی چھوڑ بھارت کو ڈبو دے گا جس طرح کہ وہ ہر سال پاکستانی پنجاب کو ڈبو دیتا ہے لیکن چین نے بھارتی تحفظات بالائے طاق رکھ کر ڈیم کی تعمیر مکمل کرکے اس کو قومی گرڈ سٹیشن کے ساتھ مکمل کردیا ۔اس ڈیم کی تعمیر سے بھارت کو اپنی جان کے لالے پڑ گئے ہیں۔

مزید : بین الاقوامی


loading...