ہائی کورٹ :آغا غضنفر کی پرنسپل ایچی سن کالج کے عہدہ پر بحالی کی درخواست مسترد

ہائی کورٹ :آغا غضنفر کی پرنسپل ایچی سن کالج کے عہدہ پر بحالی کی درخواست مسترد
ہائی کورٹ :آغا غضنفر کی پرنسپل ایچی سن کالج کے عہدہ پر بحالی کی درخواست مسترد

  


لاہور(نامہ نگارخصوصی )لاہورہائیکورٹ نے ایچی سن کالج کے سبکدوش کئے گئے پرنسپل پروفیسر آغا غضنفر کی عہدے پر بحالی کی لئے دائر درخواست ناقابل سماعت قرار دے کر مسترد کردی ۔جسٹس عائشہ اے ملک نے درخواست گزار کو دادرسی کے لئے مناسب فورم سے رجوع کرنے کی ہدایت کی ہے ۔

برطرف پرنسپل پروفیسرآغا غضنفرکی بحالی کے لئے دائردرخواست پرایچی سن کالج کے بورڈآف گورنرزکے وکلا ءنے ناقابل سماعت ہونے پر اعتراض عائد کیا اور اسے ناقابل پیش رفت قرار دیاجبکہ درخواست گزارآغاغضنفر کے وکیل نے اعتراض کی نفی کرتے ہوئے یہ موقف اختیار کیا کہ درخواست قابل سماعت ہے۔ان کاکہناتھا کہ بورڈآف گورنرزنے 18 دسمبر 2014ءکوایک معاہدہ کے تحت چار سال کے لئے پرنسپل لگایاگیا۔ بورڈکی جانب سے بے بنیاد الزامات لگائے گئے لیکن انہیں ثابت نہیں کیاگیااورپرنسپل کونوٹس دئیے بغیرانہیں عہدہ سے ہٹاادیاگیا۔

جسٹس عائشہ اے ملک نے قرار دیا سپریم کورٹ کے فیصلے کی روشنی میں درخواست قابل سماعت نہیں کیونکہ ہائی کورٹ کنٹریکٹ ملازمین کی درخواست سننے کی مجاز نہیں۔ بورڈ آف گورنرز کی طرف سے موقف اختیار کیا گیا کہ درخواست گزاراورکالج انتظامیہ کے درمیان معاہدہ ہوا تھا اورتین ماہ کی تنخواہوں کی ادائیگی کے بعدعہدہ سے الگ کیا جاسکتا تھا۔ ہائی کورٹ نے درخواست مستردکرتے ہوئے درخواست گزارکومجاز فورم سے رجوع کرنے کی ہدایت کی ،آغا غضنفر کو مبینہ طور پر اعلیٰ شخصیات کے بچوں کو داخلہ دینے سے انکار پر ان کے عہدہ سے ہٹا دیا گیا تھا جس کے خلاف انہوں نے ہائیکورٹ سے رجوع کر رکھاتھا۔

مزید : لاہور


loading...